The news is by your side.

Advertisement

متحدہ اپوزیشن کا یوم پاکستان کے موقع پر ‘قوت اخوت عوام چارٹر’ کا اعلامیہ جاری

اسلام آباد : متحدہ اپوزیشن نے یوم پاکستان کے موقع پر ‘قوت اخوت عوام چارٹر’ جاری کردیا، جس میں عہد کیا ہے کہ عدم اعتماد کامیاب بنا کر ایسا پاکستان بنائیں گے جہاں آئین کی حرمت مقدم ہو۔

تفصیلات کے مطابق متحدہ اپوزیشن کی جانب سے 23 مارچ کے موقع پر قوت اخوت عوام چارٹر کا اعلامیہ کردیا ، جس میں کہا ہے کہ متحدہ اپوزیشن میں شامل سیاسی جماعتیں پاکستان کے آئین پریقین رکھتی ہیں، پاکستان کے عوام سیاسی،معاشی ،سماجی حقوق کا ضامن ہیں۔

اپوزیشن عوام سے عہد کرتی ہیں عدم اعتمادکامیاب بناکرایساپاکستان بنائیں گے جہاں آئین کی حرمت مقدم ہو، جہاں انتظامی ادارےمنتخب پارلیمنٹ کےتابع ہوں ، عدلیہ آزاد ہو اور بغیر کسی دباؤ کے فیصلے کر سکے۔

اعلامیے میں کہا گیا کہ ایسا پاکستان جو جہاں میڈیا کی آزادی اظہار رائے کو تحفظ حق حاصل ہو، تمام منتخب ادارے عوام کے سامنے جوابدہ ہوں ، عوام کو اختیار ہو آزادانہ حق رائے دہی سے منتخب اور رخصت کر سکیں۔

متحدہ اپوزیشن کا کہنا ہے کہ آج حکومت کی ناکام پالیسیوں،کارکردگی سےغریب متوسط طبقہ متاثر ہے، عوام آج مہنگائی ، بیروزگاری ،سماجی عدم تحفظ کا شکار ہو چکے ہیں۔

اعلامیے میں کہا ہے کہ 2018الیکشن میں بدترین دھاندلی کےذریعےمصنوعی نااہل قیادت کومسلط کیاگیا، موجودہ بحران سےنجات کیلئے ضروری ہے، نااہل حکومت کو فی الفور رخصت کیا جائے ، ضروری ہے عدم اعتمادکی کامیابی کے بعد شفاف الیکشن سےنمائندہ حکومت آئے۔

متحدہ اپوزیشن کا کہنا تھا کہ آج کے تاریخی دن پر متحدہ اپوزیشن کی جماعتیں عوام سے عہد کرتی ہیں کہ حکومت میں آکرہنگامی اقدامات کرے گی ،اعلامیہ

اعلامیے کے مطابق غیر جمہوری عزائم کی سوچ نے ریاست کو73سال سے مستحکم نہیں ہونے دیا، غیر جمہوری عزائم سے قومی صلاحیت کی مربوط طاقت کو کمزور کیا، اس کھیل میں ہم سے آدھا ملک بھی جدا ہو گیا اور اب وقت آگیا ریاستی اسٹیک ہولڈرز آئین کی بالادستی قبول کریں۔

متحدہ اپوزیشن نے کہا کہ عہد کرتے ہیں میرٹ ، شفافیت ،عوامی خدمت کوفروغ دیا جائے گا ، جمہوری اداروں کو قومی، صوبائی اور مقامی سطح پرمضبوط کریں گے اور آزادانہ ،منصفانہ انتخابات کیلئےاتفاق رائےسےاصلاحات کونافذ کیا جائے گا۔

اعلامیے میں کہا گیا کہ آئین، 18ویں ترمیم اور بنیادی انسانی، سیاسی ،معاشی حقوق کادفاع کریں گے، ملک میں برداشت ،بھائی چارہ کو فروغ اورانتہا پسندی کاقلع قمع کریں گے ، سیاست سے ہر قسم کی غیر جمہوری مداخلت ختم کریں گے۔

متحدہ اپوزیشن کی جانب سے مزید کہا گیا کہ آزادی اظہار اور میڈیا پرعائد پابندیاں ختم کی جائیں گی ، کالے میڈیا قوانین ختم اور غیر جمہوری مداخلت کا نظام بند کرائیں گی، 18ویں ترمیم کو مستحکم کرکے صوبائی خود مختاری کو مضبوط کریں گے۔

اعلامیے کے مطابق صوبوں سے بااختیارمقامی حکومتوں کواختیارات منتقلی کو یقینی بنائیں گی، لاپتہ افراد کی بازیابی کے لیے ٹھوس اقدامات اٹھائیں گی، اقتصادی، سلامتی ،خارجہ پالیسیوں کوجامع لائحہ عمل میں ڈھالیں گے۔

متحدہ اپوزیشن کا کہنا تھا کہ غریب، مزدور،کسان اوردیگرکیلئےفوری اور جامع ریلیف پالیسیاں وضع کی جائی گی ، سیکیورٹی چیلنجز کے تحت سیکیورٹی اداروں کو پروفیشنل بنیادپرمضبوط کریں گے ، اندرونی سلامتی پالیسی پرمؤثر عملدرآمد سےدہشتگردی کا قلع قمع کریں گے اور احتساب کا مؤثر،شفاف قانون ،غیر جانبدارانہ ادارہ قائم کریں گے، جوملک سےمالی کرپشن کاسدباب کرے۔

Comments

یہ بھی پڑھیں