The news is by your side.

Advertisement

اُردن نے بڑی سازش ناکام بنا دی

عَمَّان: اردن کے نائب وزیر اعظم ایمن الصفدی نے کہا ہے کہ ان کے ملک نے بغض و عناد پر مبنی سازش کو ناکام بنا دیا ہے۔

تفصیلات کے مطابق اردن کے نائب وزیر اعظم نے ملک کو درپیش ایک نازک صورت حال میں اہم بیان دیتے ہوئے کہا ہے کہ شاہ اردن عبداللہ ثانی کے سوتیلے بھائی شہزادہ حمزہ غیر ملکیوں سے رابطے میں تھے، جو ملک میں عدم استحکام لانا چاہتے تھے۔

نائب وزیر اعظم ایمن الصفدی نے پریس کانفرنس میں بتایا اردن کی انٹیلی جنس نے ’زیرو آور‘ کے نام سے کچھ کمیونیکیشنز پکڑی تھیں، اور سازش کرنے والے منصوبہ بندی سے آگے بڑھ کر کارروائی کی طرف جانے والے تھے۔

شہزادہ حمزہ بن الحسین، جنھیں نظر بند کیا گیا ہے

غیر ملکی میڈیا کے مطابق اس وقت شاہ اردن عبداللہ ثانی کے سوتیلے بھائی حمزہ نظر بند ہیں، جب کہ نائب وزیر اعظم کے مطابق سینئر عہدے داروں سمیت 14 سے 16 افراد اس وقت زیر حراست ہیں، ان افراد کی گرفتاری کا پہلے ہی اعلان کیا جا چکا ہے۔

سعودی عرب اور امریکا کا شاہِ اُردن کے حوالے سے بڑا اعلان

ایمن الصفدی کا کہنا تھا سابق ولئ عہد شہزادہ حمزہ کی کچھ عرصے سے نگرانی کی جا رہی تھی، حکام نے ان کی غیر ملکیوں کے ساتھ ہونے والی بات چیت پکڑی، جس میں کہا گیا تھا کہ اردن کی سلامتی کو نقصان پہنچانے کے لیے کس وقت کیا اقدامات کیے جائیں۔

انھوں نے کہا شواہد سے ظاہر ہوتا ہے کہ شہزادہ حمزہ بیرونی اداروں اور اردن کی نام نہاد حزب اختلاف سے رابطے میں تھے، اور شہزادہ حمزہ نے 2 عربی انگریزی ویڈیوز کے ذریعے انھیں اکسایا، نیز شہزادہ حمزہ کی اہلیہ نے بحفاظت فرار ہونے کے لیے غیر ملکی نمائندے سے رابطہ بھی کیا تھا۔

Comments

یہ بھی پڑھیں