site
stats
پاکستان

خاتون صحافی سے بدسلوکی، لیگی رہنماؤں کے سامنے صحافی سراپا احتجاج

اسلام آباد: لیگی رہنماؤں ڈاکٹر طارق فضل چوہدری اور دانیال عزیز کی مشترکہ پریس کانفرنس کے دوران صحافیوں نے پمز اسپتال میں خاتون صحافی پر ہونے والے تشدد اور  بدسلوکی کے خلاف احتجاج کیا اور شیم شیم کے نعرے لگائے۔

تفصیلات کے مطابق پی آئی ڈی میں لیگی رہنما پریس کانفرنس کے لیے تشریف لائے اور بات چیت شروع کرنے لگے تو صحافیوں نے خاتون صحافی کے ساتھ پمز اسپتال میں ہونے والی بدسلوکی کے خلاف شدید احتجاج کیا۔

احتجاج کے دوران صحافیوں نے ظلم کے ضابطے ہم نہیں مانتے اور شیم شیم کے نعرے بھی لگائے، صحافیوں کی جانب سے دورانِ احتجاج کہا گیا کہ واقعے کو گزرے 48 گھنٹے گزر چکے مگر حکومت نے ابھی تک کوئی بیان تک جاری نہیں کیا۔

صحافیوں کے احتجاج کو دیکھتے ہوئے ڈاکٹر طارق فضل چوہدری نے اعتراف کیا کہ پمز اسپتال میں خاتون صحافی کے ساتھ بدسلوکی کی گئی ، ہم نے آپ کے تحفظات سُن لیے ہیں جلد واقعے میں ملوث اسپتال انتظامیہ کے متعلقہ افراد کے خلاف سخت کارروائی کی جائے گی۔

پڑھیں: ظفر حجازی کو پروٹوکول، ویڈیو بنانے پر خاتون صحافی کو بیٹے کی مغلظات

ڈاکٹر طارق فضل چوہدری نے صحافیوں کو یقین دہانی کروائی کہ ایف آئی اندراج کے لیے وزارتِ داخلہ سے مسلسل رابطے میں ہوں آئندہ چوبیس گھنٹوں میں واقعے کی ایف آئی آر درج کردی جائے گی اور تمام افراد کے خلاف کارروائی کی جائے گی۔

یاد رہے تین روز قبل ایس ای سی پی کے چیئرمین کو جب طبیعت ناسازی کے بعد پمز اسپتال پہنچایا گیا تو وہاں موجود خاتون صحافی نے ظفر حجازی کی تصاویر بنانے کی کوشش کی جس پر انہیں تشدد کا نشانہ بنایا گیا اور کچھ افراد کی جانب سے مغلظات بھی بکی گئیں۔

Print Friendly, PDF & Email
20

Comments

comments

اس ویب سائیٹ پر موجود تمام تحریری مواد کے جملہ حقوق@2018 اے آروائی نیوز کے نام محفوظ ہیں

To Top