The news is by your side.

Advertisement

جج ویڈیو اسکینڈل: اپوزیشن رہنماؤں فضل الرحمان اور کائرہ کا ردِ عمل

اسلام آباد: مریم نواز کی جانب سے پریس کانفرنس میں جج ارشد ملک کے حوالے سے ویڈیو اسکینڈل سامنے آنے کے بعد اپوزیشن رہنماؤں نے بھی اپنا رد عمل ظاہر کر دیا ہے۔

تفصیلات کے مطابق مولانا فضل الرحمان نے کہا کہ مریم نواز کی پریس کانفرنس نے پوری قوم کو حیران کر دیا ہے، ہم تو شروع سے کہتے آ رہے ہیں کہ یہ احتساب نہیں ہو رہا ہے۔

ادھر پاکستان پیپلز پارٹی کے سینئر رہنما قمر زمان کائرہ نے بھی کہا ہے کہ ہم کہتے آ رہے ہیں کہ نیب اور حکومت کا گٹھ جوڑ ہے، اگر ویڈیو اصل ہوئی تو ہمیں حکومت سے نجات پانی ہوگی۔

قبل ازیں سکھر میں میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے مولانا فضل الرحمان نے کہا کہ نام نہاد احتساب کا مکمل بائیکاٹ کرنا چاہیے، تمام اپوزیشن جماعتیں ساتھ ہیں، نواز شریف کے خلاف فیصلے دینے والے جج نے دباؤ کا اعتراف کیا۔

تازہ خبریں پڑھیں:  جج ویڈیو اسکینڈل، ناصر بٹ کے خلاف درج مقدمات کا ریکارڈ منظرِ عام پر

انھوں نے مزید کہا کہ ادارے کو حق حاصل نہیں کہ وہ ریفرنس بھیجے، اپوزیشن کے سامنے رائے دے چکا ہوں کہ اس ادارے کے سامنے پیش نہ ہوں، نہ سوالوں کا جواب دیں، مکمل بائیکاٹ کیا جائے۔

جمعیت علمائے اسلام ف کے سربراہ نے یہ بھی کہا کہ 9 جولائی کو چیئرمین سینیٹ کے خلاف تحریک پیش کریں گے۔

ادھر قمر زمان کائرہ نے کہا کہ بلاول نے عوامی رابطہ مہم شروع کی تو الزام لگنا شروع ہو گئے، الیکشن سے متعلق فضل الرحمان نے کہا تھا کہ اس کا بائیکاٹ کرو، ہم سے الیکشن چھینا گیا ہے، جتنی قربانیاں پیپلز پارٹی نے دی ہیں اتنی کسی نے نہیں دیں۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں