The news is by your side.

Advertisement

وزارت قومی صحت میں اہم انتظامی عہدوں پر خلاف میرٹ تعیناتیاں جاری

اسلام آباد : جونیئرترین ڈاکٹررابعہ اقبال کو سربراہ نیشنل ایڈزکنٹرول پروگرام تعینات کردیا گیا ، پروگرام کیلئے انٹرویو دینے والوں میں فارن گریجویٹس تھے لیکن انھیں ترجیح دی گئی۔

تفصیلات کے مطابق وزارت قومی صحت میں اہم انتظامی عہدوں پرخلاف میرٹ تعیناتیاں جاری ہے، جونیئرترین ڈاکٹررابعہ اقبال سربراہ نیشنل ایڈزکنٹرول پروگرام تعینات کردیا گیا۔

،ذرائع کا کہنا ہے کہ ڈاکٹررابعہ اقبال کو پبلک ہیلتھ پروگرامز کا تجربہ نہیں ، خواہشمندامیدواروں میں پی ایچ ڈی ہولڈرشامل تھے۔

،ذرائع نے بتایا کہ سربراہ ایڈزپروگرام کیلئے انٹرویو دینے والوں میں فارن گریجویٹس تھے لیکن ڈاکٹررابعہ اقبال کو تجربہ کار پی ایچ ڈی امیدوار پر ترجیح دی گئی۔

گریڈ18کی ڈاکٹررابعہ اقبال پولی کلینک اسپتال میں تعینات تھیں ، ڈاکٹررابعہ اقبال کوپولی کلینک سےڈیپوٹیشن پرایڈزپروگرام لایاگیاہے اور ڈاکٹررابعہ اقبال کو اہم حکومتی شخصیت کی سفارش پرتعینات کیاگیا،ذرائع

پولی کلینک انتظامیہ نےگزشتہ ماہ ڈاکٹررابعہ کوعہدےسےہٹایاتھا، ان کوانتظامی امورمیں غفلت برتنے پر عہدے سے ہٹایاگیاتھا،ڈاکٹررابعہ کولاکھوں کی ڈینگی کٹس ایکسپائر ہونے پر ہٹایا گیا تھا،ذرائع

ڈاکٹررابعہ کی سربراہ ایڈزپروگرام تعیناتی پروزارت صحت کےافسران میں تشویش لہر دوڑ گئی ہے۔

ذرائع کا کہنا ہے کہ نیب نےپولی کلینک کیلئےایکسپائرڈینگی کٹس خریداری کانوٹس لےلیا اور پولی کلینک اسپتال انتظامیہ کومراسلہ بھجوا دیا ہے۔

مراسلے میں پولی کلینک انتظامیہ سےایکسپائرڈینگی کٹس سے متعلق ریکارڈ طلب کرتے ہوئے کہا گیا ہے کہ انتظامیہ ایکسپائرکٹس معاملے کی تفصیلات فراہم کرے۔

محکمہ صحت نےپولی کلینک ایکسپائرکٹس معاملےکی انکوائری کی تھی ، انکوائری میں ایکسپائرکٹس خریداری میں کرپشن کی تصدیق ہوئی تھی، پولی کلینک کیلئےایکسپائرڈینگی ٹیسٹنگ کٹس کی خریداری2021میں کی تھی۔

Comments

یہ بھی پڑھیں