The news is by your side.

Advertisement

جسٹس گلزار احمد نے سندھ کو پاکستان کا کرپٹ ترین صوبہ قرار دے دیا

اسلام آباد : سپریم کورٹ کے سینئر جج جسٹس گلزار نے سندھ کو پاکستان کا کرپٹ ترین صوبہ قرار دیتے ہوئے کہا سندھ کے بجٹ کا ایک روپیہ بھی عوام پر خرچ نہیں ہوتا، بدقسمتی سے سندھ میں عوام کےلیے کچھ نہیں ہے۔

تفصیلات کے مطابق سپریم کورٹ کے سینئر جج جسٹس گلزار نے سکھر پریس کلب کیس کی سماعت کے دوران ریمارکس میں کہا صوبہ سندھ پاکستان کا کرپٹ ترین صوبہ ہے، بجٹ کاایک پیسہ بھی صوبے پر خرچ نہیں کیاجاتا، سب ایک سسٹم کاحصہ ہیں اور سب جانتے ہیں کیا ہورہا ہے۔

جسٹس گلزار کا کہنا تھا صوبہ سندھ کاہر محکمہ ہر شعبہ ہی کرپٹ ہے، سندھ کے بجٹ کا ایک روپیہ بھی عوام پر خرچ نہیں ہوتا، بدقسمتی سے سندھ میں  عوام کےلیے کچھ نہیں ہے، لاڑکانہ میں ایچ آئی وی کی صورتحال دیکھیں، دیکھتے دیکھتے پورا لاڑکانہ ایچ آئی وی پازیٹو ہوجائے گا۔

سپریم کورٹ کے سینئر جج نے ریمارکس دیئے سکھر شہر کی ایسی تیسی پھیر دی گئی ہے، سکھرگرم ترین شہر ہے لیکن عوام کثیرمنزلہ عمارتوں میں رہتے ہیں، سکھر شہر میں بجلی ہے نہ پانی، عوام کوبنیادی سہولتیں نہ ملیں تو پرتشدد ہوجاتے ہیں۔

سینئر جج کا کہنا تھا میئرسکھر صاحب !کثیرمنزلہ عمارتیں گراتےکیوں نہیں ؟ سکھروالوں کے پاس پینے کیلئے پانی ہے نہ واش روم کےلیے، گرم شہروں میں کثیرمنزلہ عمارتیں نہیں بن سکتیں۔

جسٹس گلزار احمد نے کہا پہلےکراچی سےنمٹ لیں پھرسکھر کی طرف آئیں گے، ہمیں پارک ہر صورت خالی چاہییں، کراچی میں ہم نے فلاحی اداروں کی ایمبولنس بھی ہٹوا دیں، پارکوں میں کوئی بزنس یا کاروبار نہیں چلنے دیں گے۔

مزید پڑھیں : زیادہ تر پولیس اہلکار رات کوڈکیتی کرتے ہیں، جسٹس گلزار

اس سے قبل سپریم کورٹ کے سینئر جج جسٹس گلزار احمد نے ایک کیس میں ملک بھر میں پولیس کے نظام کو ناکام قرار دیتے ہوئے کہا تھا ملک میں پولیس نام کی کوئی چیز نہیں، زیادہ تر پولیس اہلکار رات کوڈکیتی کرتے ہیں، سرکاری افسران دفاتر میں بیٹھ کرحرام کھا رہے ہیں، لوگ گلے کاٹ رہے ہیں پولیس کہاں ہے؟

یاد رہے جسٹس گلزار احمد نے امل عمر قتل کیس میں سندھ حکومت کی کارکردگی پر عدم اعتماد کا اظہار کرتے ہوئے کہا تھا کراچی پاکستان کا بدترین شہربن چکا ہے، یہاں کوئی حکومت نہیں، شہریوں کولوٹاجارہاہے۔

جسٹس گلزار احمد کا کہنا تھا پہلے ہم گھر سے دور جا کر کھیلتے تھے، اب ہمارے بچے گھر سے نکل بھی نہیں سکتے،گزشتہ روز کراچی میں دن دہاڑے ڈکیتی ماری گئی ، بھرا ہوئے بازار میں گاڑی روک کر نوے لاکھ لوٹ لئے گئے ۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں