The news is by your side.

Advertisement

کے الیکٹرک نے کراچی کے شہریوں کی زندگی اجیرن کر دی

کراچی: کے الیکٹرک نے کراچی کے شہریوں کی زندگی اجیرن کر دی، مختلف علاقوں میں شہریوں نے رات سوتے جاگتے گزار دی۔

تفصیلات کے مطابق کراچی کے علاقوں ماڈل کالونی، شاہ فیصل ٹاؤن، طارق بن زیاد سوسائٹی، معین آباد میں بجلی رات بھر بند رہی، ایف بی ایریا، گلشن اور گلستان جوہر کے مختلف بلاکس میں بھی بجلی کی فراہمی معطل رہی، نارتھ کراچی اور نیو کراچی کے مختلف علاقوں میں بھی لوڈ شیڈنگ کا سلسلہ عروج پر رہا۔

کراچی میں لوڈ شیڈنگ پر گزشتہ روز وزیر اعظم عمران خان نے بھی ایکشن لے لیا، انھوں نے جمعے کو کے الیکٹرک حکام طلب کر لیے، کابینہ اجلاس میں کراچی میں بجلی بحران پر بحث کی گئی، دو دن بعد وزیر اعظم کی زیر صدارت اہم اجلاس ہوگا جس میں کے الیکٹرک کے ساتھ معاملات پر انھیں بریف کیا جائے گا۔

سندھ حکومت نے کے الیکٹرک کو 40 ایکڑ زمین الاٹ کر دی

کابینہ میں ابراج گروپ اور بلاول بھٹو زرداری کے الزامات کا تذکرہ بھی رہا، وفاقی وزیر فیصل واوڈا نے کہا بلاول کی رپورٹ پیپلز پارٹی کے خلاف چارج شیٹ ہے، کے الیکٹرک کا معاملہ انرجی کمیٹی کے سپرد کر دیا گیا، اجلاس میں کے الیکٹرک اور گیس کی قیمتوں سے متعلق فیصلہ ایک ہفتے کے لیے مؤخر کیا گیا۔

وفاقی وزیر اسد عمر نے کہا کہ کے الیکٹرک کے نج کاری معاہدے میں قانونی رکاوٹ نہیں تو پبلک کر دیں گے، کہتے ہیں نج کاری پی ٹی آئی دور میں ہوئی نہ کچھ چھپا رہے ہیں۔

انھوں نے اے آر وائی نیوز کے پروگرام پاور پلے میں کہا کہ ایف آئی اے کی رپورٹ میں الزامات گزشتہ حکومتوں پر ہیں، بلاول بھٹو نے رپورٹ درست انداز میں نہیں پڑھی، شنگھائی پاور سے معاہدے میں تاخیر کی وجہ وصولی ہے، کے الیکٹرک کو گیس پیپلز پارٹی کے پانچ سالہ دور حکومت میں دی جاتی رہی۔

fb-share-icon0
Tweet 20

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں