The news is by your side.

Advertisement

کراچی والوں کے لیے خوشخبری

کراچی: فراہمی آب کے منصوبے کے فور کا ڈیزائن درست قرار دے دیا گیا ، منصوبے کے ڈیزائن کی تحقیق نیدرلینڈ کی کمپنی ڈیلٹاریس نے کی ، ڈیزائن کو دوبارہ تیارکرنے کے لیے 13 کروڑ روپے خرچ کیے گئے۔

تفصیلات کے مطابق کراچی والوں کے لیے خوشخبری آگئی ، کے فور پرنیسپاک اورنیدرلینڈکی کمپنی کی رپورٹ سامنے آئی ، جس میں بتایا گیا کے فور کے حوالے سے بنایا گیاڈیزائن درست ہے، دوران سروے ڈیزائن کی کچھ خامیوں کو دور کیا جاسکتا ہے۔

رپورٹ میں بتایا گیا دونوں ڈیزائن میں سے کسی پربھی کام شروع کیا جا سکتا ہے، کےفور منصوبے کے ڈیزائن کی تحقیق نیدرلینڈ کی کمپنی ڈیلٹاریس نے کی ، پمپنگ اسٹیشن اورنہری ڈیزائن کی مکمل طور پر تحقیق کی گئی، کے فور کے پمپنگ اسٹیشن اور پانی کےنظام کی مشینری ضرورت سے زائد ہے۔

رپورٹ کے مطابق کے فور کے ڈیزائن میں اعداد و شمار کانظر انداز کرنے والا فرق موجود ہے، پرانے ڈیزائن پر کراچی کو پانی فراہم کیا جاسکتا ہے، ڈیزائن کو دوبارہ تیارکرنے کے لیے13کروڑ روپے خرچ کیےگئے، نیدرلینڈ کی کمپنی ڈیلٹاریس دنیا بھر میں پانی کےمنصوبوں کے حوالے سے معروف ہے۔

مزید پڑھیں : کے فور کی فزیبلٹی رپورٹ میں سنگین غلطیوں کا انکشاف

یاد رہے فراہمی آب کے سب سے بڑے منصوبے کے فور کی فزیبلٹی رپورٹ میں سنگین غلطیوں پر سندھ حکومت نے تحقیقات کے لیے 3 رکنی کمیٹی بنا دی تھی، ذرائع کا کہنا تھا کینجھر جھیل سے کراچی 121 کلو میٹر روٹ میں 2 اہم نہری ذخائر شامل نہیں ہیں، سابقہ کنسلٹنٹ کمپنی نے 2 اہم نہری ذخائر ہالیجی اور ہاڈیروہر کو فزیبلٹی رپورٹ میں شامل نہیں کیا۔

خیال رہے 12 سال گزرنے کے بعد کے فور کے تین مرحلوں میں سے ایک بھی مکمل نہ ہو سکا، ذرائع کے مطابق جولائی 2018 تک کے فور کا فیز وَن مکمل ہو جانا تھا، کے فور کے دوسرے اور تیسرے فیز کو 2022 تک مکمل ہونا تھا، منصوبے کی ابتدائی لاگت تقریباً 25 ارب روپے تھی، اب اس کی لاگت 100 ارب روپے سے بھی تجاوز کر گئی ہے۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں