site
stats
اہم ترین

کابل : مظاہرے کے دوران دو بم دھماکے، 80 افراد ہلاک 200 سے زائد زخمی

کابل : افغانستان کے دارالحکومت میں مظاہرے کے دوران 2 بم دھماکے 80 افراد ہلاک اور دو سو سات زخمی ہوگئے جبکہ مزید ہلاکتوں کا خدشہ بھی ظاہر کیا گیا ہے۔

افغان میڈیا کے مطابق پاور اسٹیشن کی تعمیر کے خلاف ہزارہ برادری کے تحت ہونے والے مظاہرے میں دو دھماکے ہوئے، اس مظاہرے میں ہزارہ برادری کے ہزاروں افراد موجود تھے۔

 افغان میڈیا نے مزید بتایا ہے کہ یکے بعد دیگرے دو بم دھماکوں کی شدت بہت زیادہ تھی، جس کے باعث ابتدائی طور پر 20 افراد ہلاک اور متعدد زخمی ہوئے۔ افغان طالبان نے دھماکے سے لاتعلقی کا اظہار کردیا،

دھماکے کے فوری بعد بھگدڑ مچنے سے بھی کئی افراد زخمی ہوئے جبکہ صورتحال کو قابو میں کرنے کے لیے سیکورٹی فورسز کی نفری کو طلب کرلیا گیا ہے۔

KABUL POST 2

جائے حادثہ پر ریسکیو کا عمل جاری ہے جس میں فلاحی رضا کاروں کے علاوہ مقامی افراد کی بڑی تعداد بھی حصہ لے رہی ہے، دھماکے کے نتیجے میں زخمی ہونے والے افراد کو اسپتال منتقل کیا جارہا ہے۔

سیکورٹی فورسز کی بھاری تعداد نے علاقے کو گھیرے میں لے کر سرچ آپریشن شروع کردیا ہے، افغان حکام نے تصدیق کی ہے کہ دھماکے میں مظاہرین کو نشانہ بنایا گیا ، مظاہرے میں عوام کی بڑی تعداد موجود تھی۔

KABUL POST 1

 افغان محمکہ داخلہ کے حکام کی جانب سے جاری کردہ بیان میں کہا گیا ہے کہ ’’احتجاجی مظاہرے میں تین خودکش حملہ آور داخل ہوئے تھے، جن میں سے ایک نے اپنے آپ کو دھماکے سے اڑایا دوسرے کی جیکٹ پھٹ نہ سکی اور تیسرا پولیس کی فائرنگ سے ہلاک ہوا ہے۔

جبکہ ترجمان وزارتِ صحت نے دھماکے میں 80 افراد کے جاں بحق ہونے کی تصدیق کرتے ہوئے مزید ہلاکتوں کا خدشہ ظاہر کیا ہے۔ افغان طالبان نے کابل میں احتجاج کے دوران خود کش حملے سے لاتعلقی کااظہار کیاہے۔

Print Friendly, PDF & Email
20

Comments

comments

اس ویب سائیٹ پر موجود تمام تحریری مواد کے جملہ حقوق@2018 اے آروائی نیوز کے نام محفوظ ہیں

To Top