The news is by your side.

Advertisement

افغان طالبان کے عہدیدار کا کرپٹ‌ افراد کو شرعی قوانین کے مطابق سزا دینے کا اعلان

افغان طالبان کی جانب سے مقرر کیے جانے والے کابل کے قائم مقام میئر حمد اللہ نعمانی نے کرپٹ افراد اور عناصر کو شرعی قوانین کے مطابق سزا دینے کا اعلان کردیا۔

افغان میڈیا رپورٹ کے مطابق طالبان کے بلدیاتی کمیشن کے سربراہ اور کابل کے قائم مقام میئر حمد اللہ نعمانی نے کہا کہ بدعنوان افراد سے شرعی قانون کے تحت نمٹاجائےگا۔

انہوں نے کہا کہ ملک میں کرپشن کی کوئی گنجائش نہیں ہے، اگر کسی نے کرپشن کی تو اُسے شرعی قوانین کا سامنا کرنا پڑے گا۔

مزید پڑھیں: امریکی انخلا کے چند گھنٹوں بعد افغان طالبان کے ترجمان کا تاجروں سے بڑا مطالبہ

یہ بھی پڑھیں: افغان طالبان کا عام معافی کا اعلان، حکومتی شخصیات، پولیس چیف اور سیکیورٹی سربراہ رہا

کابل کے قائم مقام میئر نے کہا کہ ’بلدیاتی اداروں کیلئے طویل المدتی منصوبوں پر غور کررہے ہیں، ماضی میں بڑے پیمانے پرکرپشن کرنے والوں کو معاف کردیا گیا ہے، اب ایسے کسی بھی سابق سرکاری عہدیدار کو سزا نہیں دی جائے گی البتہ مستقبل میں کسی بھی قسم کی بدعنوانی برداشت نہیں‌ کی جائے گی‘۔

حمد اللہ نعمانی کا کہنا تھا کہ ماضی کی بد عنوانیوں میں ملوث کسی کو بھی گرفتار نہیں کیا گیا،  کابل کےدکان دار کسی بھی شخص کو کوئی ٹیکس یا بھتہ ادا نہ کریں، نئی حکومت کےقیام کے بعد ٹیکس سےمتعلق قانون وضع کر دیا جائے گا۔

Comments

یہ بھی پڑھیں