کلبھوشن کیس: اٹارنی جنرل کی سربراہی میں 5 رکنی وفد ہیگ پہنچ گیا Kalbushan Case
The news is by your side.

Advertisement

کلبھوشن کیس: اٹارنی جنرل کی سربراہی میں 5 رکنی وفد ہیگ پہنچ گیا

اسلام آباد: عالمی عدالت انصاف میں کلبھوشن کیس کی پیروی کرنے کے لیے اٹارنی جنرل کی سربراہی میں 5 رکنی وفد ہیگ پہنچ گیا۔

تفصیلات کے مطابق پاکستان کی جانب سے عالمی عدالتِ انصاف میں کلبھوشن کیس سماعت کے لیے اٹارنی جنرل کی سربراہی میں 5 رکنی وفد ہیگ پہنچ گیا، وفد میں اٹارنی جنرل اشتر اوصاف ، ڈی جی ساؤتھ ایشیا ڈاکٹر فیصل اور بیرسٹر خاور سمیت پانچ لوگ موجود ہیں۔

ہیگ میں 8 جون پاکستانی وقت کے مطابق دوپہر تین بجے کلبھوشن کیس سے متعلق قانونی ٹیم سے مٹینگ کرے گی جس کے بعد پاکستان عالمی عدالتِ انصاف میں مقدمے کی پیروی کے لیے 3 ایڈہاک ججز کو نامز کرے گا۔

پڑھیں: کلبھوشن کیس: عالمی عدالت میں وکلاء کی ٹیم تبدیل نہ کرنے کا فیصلہ

پاکستان کی جانب سے نامزد کیے جانے والے ججز میں سابق چیف جسٹس ناصر الملک، جسٹس تصدق حسین جیلانی شامل ہیں علاوہ ازیں ایڈہاک ججز کے لیے سابق اٹارنی جنرل مخدوم علی کا نام بھی شامل کیا گیا ہے۔

عالمی عدالتِ انصاف میں کلبھوشن کیس کی سماعت کے لیے بھارت کی جانب سے پہلے ہی ایڈہاک جج تعینات ہے تاہم وہاں پاکستان کی نشست خالی تھی جس کو پُر کیا جائے گا۔

مزید پڑھیں: کلبھوشن کیس: بھارت کو قونصلر رسائی مل سکتی ہے، سرتاج عزیز

یاد رہے بھارت نے اپنے جاسوس کو بچانے کے لیے عالمی عدالت انصاف میں درخواست دائر کی تھی، جہاں پاکستانی وکیل خاور قریشی نے ملک کی نمائندگی کرتے ہوئے دلائل پیش کیا۔ آئی سی جے نے دونوں ممالک کے دلائل سننے کے بعد فیصلہ سنایا کہ کبلھوشن کی پھانسی معطل کی جائے اور اسے کونسلر تک رسائی دی جائے۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں