The news is by your side.

Advertisement

انتہا پسندوں کو آئینہ دکھانے والے کمل ہاسن الیکشن میں شکست کے باوجود پرعزم

فقط چودہ ماہ قبل بننے والی ہماری سیاسی پارٹی کو عوام نے شان دار ردعمل دیا: اداکار

چنائے: انتہاپسندوں‌ کو آئینہ دکھانے والے ممتاز اداکار کمل ہاسن کی پارٹی الیکشن میں کوئی سیٹ حاصل نہیں کرسکی، مگر انھوں‌ نے نتائج کو حوصلہ افزا قرار دیا ہے.

تفصیلات کے مطابق کمل ہاسن کی نومولود جماعت ایم این ایم نے تامل ناڈو کی 36 نشستوں‌ پر اپنے امیدوار کھڑے کیے تھے.

اگرچہ پارٹی کا کوئی امیدوار الیکشن میں کامیاب نہیں ہوا، مگر پارٹی کو مثبت ردعمل ملا، بالخصوص شہری علاقوں میں اسے خاصے ووٹ پڑے. 11 حلقوں‌میں یہ تیسری بڑی پارٹی تھی.

اس ضمن میں اپنے حالیہ بیان میں‌ سیاست کی سمت آنے والے سپر  اسٹار کمل ہاسن نے کہا کہ ہمیں توقع نہیں تھی کہ فقط چودہ ماہ قبل بننے والے پارٹی کو ایسا فیڈبیک  ملے گا، مگر پارٹی کو شان دار ردعمل ملا.

ان کا مزید کہنا تھا کہ نئی جماعت کی جانب سے اتنی اچھی کارکردگی کا مظاہرہ کرنے کی شاید ہی کوئی مثال ہو، یہ بہت ڑی کامیابی ہے.

مزید پڑھیں: گرفتاری سے نہیں‌ ڈرتا، ہندو دہشت گردی سے متعلق اپنے بیان پر قائم ہوں: کمل ہاسن

انھوں‌ نے اس بات پر بھی خوشی کا اظہار کیا ہے کہ تامل ناڈو نے کے عوام نے بی جے پی کے بیانیے اور ووٹرز کو رد کر دیا.

خیال رہے کہ تامل ناڈو میں ڈی ایم کے اور کانگریس کے الائنس نے کامیابی حاصل کی، کمل ہاسن کی جماعت کو بھی اس اتحاد کا حصہ بننے کی پیش کش کی گئی تھی، مگر انھوں نے انکار کر دیا.

یاد رہے کہ کمل ہاسن اپنی روشن خیالی کی وجہ سے انتہاپسند حلقوں‌ میں‌ ناپسندیدہ تصور کیے جاتے ہیں.

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں