The news is by your side.

Advertisement

فائنل ہارنے پر افسوس ہے، کیچ پکڑنے کی بھرپور کوشش کی، کامران اکمل

کراچی: پشاور زلمی کے وکٹ کیپر اوپنر بلے باز کامران اکمل نے کہا ہے کہ فائنل ہارنے کا افسوس ہے، کیچ پکڑنے کی بھرپور کوشش کی تھی۔

ان خیالات کا اظہار انہوں نے اے آر وائی نیوز کے پروگرام الیونتھ آور میں گفتگو کرتے ہوئے کیا، کامران اکمل نے کہا کہ پی ایس ایل تھری کا فائنل جیت جاتے تو زیادہ اچھا لگتا، صرف میری وجہ سے نہیں ٹیم کی کارکردگی سے فائنل میں پہنچے تھے۔

پشاور زلمی کے اوپنر بلے باز نے کہا کہ انجری کے ساتھ کھیل رہا تھا، میری جگہ کوئی اور ہوتا تو اس انجری کے ساتھ میچ نہیں کھیل سکتا تھا، فائنل ہارنے پر افسوس ہے، ٹیم کی جیت کے لیے ہی کھیل رہا تھا۔

کامران اکمل نے کیچ چھوٹ جانے پر تنقید کرنے والوں کو جواب دیتے ہوئے کہا کہ تنقید کرنے والے تنقید ہی کرتے ہیں، بابر اعظم دنیا کا بہترین کھلاڑی ہے مگر اس پر بھی تنقید کی جاتی ہے۔

پی ایس ایل تھری میں سنچری بنانے والے کامران اکمل نے کہا کہ کراچی میں 9 سال بعد کرکٹ کی بحالی پر خوش ہوں، اپنی کارکردگی پر خوش ہوں، مزید بہتر کھیل پیش کرکے قومی ٹیم میں جگہ بنانے کی کوشش کروں گا۔

کراچی کنگز کے سب کھلاڑیوں نے اچھا کھیل پیش کیا،عماد وسیم

پی ایس ایل تھری میں کراچی کنگز کی جانب سے کپتانی کرنے والے آل راؤنڈر عماد وسیم نے کہا کہ افسوس ہوا کراچی کنگز فائنل میں نہیں پہنچ سکی، کراچی کنگز کے لڑکوں نے میدان میں مقابلہ کیا۔

عماد وسیم نے کہا کہ کراچی کنگز کے سب کھلاڑیوں نے اچھا کھیل پیش کیا، ہماری ٹیم کے کئی لڑکے انجری کا شکار ہوگئے تھے، کراچی کنگز کے سب کھلاڑیوں نے اچھا کھیل پیش کیا۔

آل راؤنڈر عماد وسیم کا اپنی انجری کے حوالے سے کہنا تھا کہ میری طبیعت اب کچھ بہتر ہوئی ہے، ٹیم نے بھرپور محنت کی، ہار جیت کھیل کا حصہ ہوتا ہے، ٹورنامنٹ میں بہت مزہ آیا، کامران اکمل نے ٹورنامنٹ میں شاندار کھیل پیش کیا جبکہ بابر اعظم بہترین کھلاڑی ہیں۔

واضح رہے کہ کراچی کنگز کے کپتان عماد وسیم کیچ لیتے ہوئے سر پر چوٹ لگنے سے زخمی ہوگئے تھے، ان کے بعد ایون مورگن اور پھر محمد عامر نے کپتانی کے فرائض انجام دئیے تھے۔


خبر کے بارے میں اپنی رائے کا اظہار کمنٹس میں کریں۔ مذکورہ معلومات کو زیادہ سے زیادہ لوگوں تک پہچانے کے لیے سوشل میڈیا پر شیئر کریں۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں