The news is by your side.

Advertisement

کرپشن کا الزام : ن لیگ کے سابق وفاقی وزیر کامران مائیکل کا 5روزہ راہداری ریمانڈ منظور

لاہور: لاہور کی احتساب عدالت نے سابق وفاقی وزیر پورٹس اینڈ شپنگ کامران مائیکل کو پانچ روزہ راہداری ریمانڈ پر نیب کے حوالے کردیا، ان پر کے پی ٹی پلاٹ کی غیرقانونی الاٹمنٹ کا الزام ہے۔

تفصیلات کے مطابق ن لیگ کےسابق وفاقی وزیر پورٹ اینڈشپنگ کامران مائیکل کو احتساب عدالت کےجج نجم الحسن کے روبرو پیش کیا گیا، نیب حکام نے کامران مائیکل کو سندھ لے جانے کے لئے 5 روزہ راہداری ریمانڈکی استدعا کی۔

نیب نےمؤقف اختیار کیا کہ کامران مائیکل نےاختیارات کاغلط استعمال کیا اور کراچی پورٹ ٹرسٹ کےپلاٹس کی الاٹمنٹ میں بڑے پیمانے پر خزانے کو نقصان پہنچایا۔

احتساب عدالت نے کامران مائیکل کاپانچ روزہ راہداری ریمانڈدے دیا۔

کامران مائیکل پر کے پی ٹی کے پلاٹ کی غیرقانونی الاٹمنٹ اور اختیارات کے ناجائز استعمال کا بھی الزام ہے۔

مزید پڑھیں : نیب نے سابق وفاقی وزیرپورٹ اینڈ شپنگ کامران مائیکل کو گرفتارکرلیا

گذشتہ روز قومی احتساب بیورو نے سابق وفاقی وزیرپورٹ اینڈ شپنگ کامران مائیکل کوگرفتار کیا تھا، ترجمان نیب نے بتایا تھا کہ کامران مائیکل کیخلاف کے پلاٹ من پسند افراد کو نوازنے پر تحقیقات جاری ہے اور یہ نیب کراچی کو کرپشن کے الزام میں مطلوب تھے۔

خیال رہے کامران مائیکل ن لیگ دور میں پورٹس اینڈ شپنگ کے وزیر رہے ہیں۔

واضح رہے کہ 6 فروری کو قومی احتساب بیورو نے پنجاب کے سینئر صوبائی وزیرعبدالعلیم خان کو آمدن سے زائد اثاثوں اورآف شور کمپنی رکھنےکے الزام میں حراست میں لے لیا تھا۔

بعد ازاں علیم خان کو احتساب عدالت میں پیش کیا گیا ، جہاں عدالت نے آمدن سے زائد اثاثہ جات اور آف شور کمپنی کیس میں گرفتار پی ٹی آئی کے سینئر رہنما علیم خان کا 15 فروری تک جسمانی ریمانڈ منظور کرلیا تھا۔

خیال رہے اس وقت میاں‌ شہباز  شریف، میاں‌ نواز شریف اور حمزہ شہباز سمیت مسلم لیگ ن کی سینئر قیادت کے خلاف نیب کی تحقیقات جاری ہیں۔.

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں