The news is by your side.

دو مسافر طیارے خوفناک حادثے سے بال بال بچ گئے

کراچی : کراچی کے جناح انٹرنیشنل ایئرپورٹ پر دو طیارے خوفناک حادثے سے بال بال بچ گئے، واقعات سول ایوی ایشن عملے کی غفلت کے پیش آئے۔

اس حوالے سے ذرائع کا کہنا ہے کہ سول ایوی ایشن اتھارٹی (سی اے اے) کا عملہ اپنے جہازوں کو پرندوں کے ٹکرانے سے محفوظ رکھنے میں ناکام رہا۔

کراچی سے پشاور جانے والی پی کے350سے اڑان بھرتے ہی ایک پرندہ ٹکراگیا جبکہ لاہور سے کراچی آنے والی دوسری پرواز پی کے305سے دوران لینڈنگ پرندہ ٹکرایا۔

پرندہ ٹکرانے کے باعث پشاور جانے والی پرواز پی کے350کو پائلٹ رن وے پر واپس لے آیا، لاہور سے آنے والی پرواز پی کے305 کے جہاز کی انسپکشن کی جارہی ہے۔

ذرائع کے مطابق سی اے اے تاحال جہازوں کو پرندوں سے محفوظ رکھنے کے لئے اب تک کوئی جدید نظام نصب نہ کرسکا۔

ترجمان پی آئی اے نے جہازوں سے پرندے ٹکرانے کے واقعات کی تصدیق کرتے ہوئے بتایا ہے کہ کراچی ایئرپورٹ پر آج دو جہازوں سے پرندے ٹکرائے ہیں۔

صورتحال ایئرٹریفک کنٹرول کی غفلت کی وجہ سے پیش آئی یا پائلٹ کی غلطی تھی؟ اس سلسلے میں کراچی ایئرپورٹ پر اعلیٰ سطحی تحقیقات شروع کردی گئی ہیں۔

Comments

یہ بھی پڑھیں