The news is by your side.

Advertisement

میئر کراچی نے 26 ارب 44 کروڑ سے زائد کا بجٹ پیش کردیا

کراچی: میئر کراچی وسیم اختر نے 26 ارب 44 کروڑ سے زائد کا بلدیہ عظمیٰ کا بجٹ منظوری کےلیے پیش کردیا،جس میں بچت کا میزانیہ 10 کروڑ 9 لاکھ 37 ہزار روپے ہے۔

تفصیلات کے مطابق آیندہ مالی سال کے لیےمیئر کراچی نےبلدیہ عظمیٰ کا بجٹ منظوری کےلیے پیش کیا ہے، جس کا حجم 26 ارب 44 کروڑ 98 لاکھ 25 ہزار روپے ہے۔واضح رہے کہ 19-2018 میں کے ایم سی کا بجٹ 27 ارب روپے رکھا گیا تھا۔

بلدیہ عظمیٰ کے نئے مالی سال کے بجٹ میں بچت  10 کروڑروپے سے زائد کی بچت ظاہر کی گئی ہے، بجٹ کے اعداد و شمار کے مطابق نئے بجٹ میں 26 ارب 43 کروڑ 88 لاکھ 88ہزار روپے اخراجا ت کا تخمینہ ہے۔

2019 اور 20 میں ترقیاتی کاموں کےلیے 9 ارب 47 کروڑ 36 لاکھ روپے مختص کیے گئے ہیں جبکہ ترقیاتی منصوبوں کےلیے 5 ارب 13 کروڑ روپے مختص کیے گئے ہیں۔

آئندہ مالی سال کے بجٹ میں ڈسٹرکٹ اور ضلعی ای ڈی پی کے لیے4 ارب 34 کروڑمختص کیے گئے ہیں۔

میئر کراچی وسیم اختر کا کہنا ہے کہ آئندہ مالی سال کےدوران700 ترقیاتی منصوبوں کیلئے رقم مختص کی ، سڑکوں اور انفراسٹرکچر کے سب سے زیادہ 494 منصوبوں کو شامل کیاہے جبکہ منصوبوں کےلیے1697.7 ملین روپے رکھےہیں۔

وسیم اختر کا کہنا تھا کہ میونسپل سروسز کے10 منصوبوں کے لیے42.650 ملین روپے، ٹرانسپورٹ اینڈکمیونیکیشن کے 7 منصوبوں کے لئے 35 ملین مختص کیے گئے ہیں۔

میئرکراچی وسیم اختر نے کہا کہ اے ڈی پی میں ایک ارب 67 کروڑ کم کرنے سے میزانیہ کم ہوگیا۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں