کراچی سرکلرریلوے کی بحالی کیلیے وزیراعلیٰ سندھ متحرک ہوگئے -
The news is by your side.

Advertisement

کراچی سرکلرریلوے کی بحالی کیلیے وزیراعلیٰ سندھ متحرک ہوگئے

کراچی : وزیراعلیٰ سندھ نے کراچی سرکلر ریلوے کیلئے پینتالیس ملین روپے کی فیزیبلیٹی رپورٹ بنانے کی منظوری دےدی۔ ایڈیشنل چیف سیکریٹری ترقیات کو وفاقی حکومت سے خودمختار ضمانت لینے کی ہدایت بھی کردی گئی ہے۔

تفصیلات کے مطابق وزیراعلیٰ سندھ کراچی سرکلرٹرین کاپہیہ گھمانے کیلئے متحرک ہوگئے، مراد علی شاہ نے سندھ سیکریٹریٹ میں اہم اجلاس کی صدارت کی۔ اجلاس میں انہوں نے کراچی سرکلر ریلوے کے سرکل پر قبضہ مافیا سے متعلق مکمل رپورٹ طلب کی۔

وزیر اعلیٰ سندھ کو بتایا گیا کہ تین سو ساٹھ ایکڑ کے ٹریک پر محیط ٹریک میں سے سڑسٹھ ایکڑ پرتجاوازت قائم ہوئی ہیں۔ پانچ ہزار چھ سوترپن مکانات سرکتے سرکتے سرکلر ٹرین کے ٹریک پر آگئے ہیں، اس کے علاوہ دوہزار نوسو ستانوے دیگرعمارتوں کا بھی ٹریک پر قبضہ ہے۔

وزیر اعلی مراد علی شاہ نے کمشنر کو ڈی سیز کےساتھ جاکر تجاوزات کا جائزہ لینے کی ہدایت کی اورایک ہفتے میں رپورٹ طلب کرلی، وزیر اعلیٰ نے کہا کہ بتایا جائے کہ تجاوزات کے خاتمے میں کتنا وقت درکارہوگا؟

وزیراعلیٰ سندھ نے کہا کہ سی پیک میں کراچی سرکلر ریلوے شامل ہو چکا ہے لہٰذا کراچی سرکلر ریلوے میں کسی قسم کی رکاوٹ نہیں ہونی چاہیئے۔

یاد رہے کہ دوہزار چھ سو نو ملین ڈالر کی لاگت سے بحال ہونے والے کراچی سرکلر ریلوے منصوبے کیلئے تینتالیس کلومیٹر ٹریک درکار ہے۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں