The news is by your side.

Advertisement

کراچی، کلفٹن میں گھر سے باپ بیٹے کی لاشیں برآمد

کراچی: شہر قائد کے علاقے کلفٹن عبداللہ شاہ غازی مزار کے قریب گھر سے باپ بیٹے کی لاشیں برآمد ہوئی ہیں۔

تفصیلات کے مطابق کراچی کے علاقے کلفٹن میں عبداللہ شاہ غازی مزار کے قریب گھر سے باپ اور بیٹے کی لاشیں ملیں ہیں، دونوں کو چھریوں کے وار کرکے قتل کیا گیا۔

ایس ایس پی شیراز نذیر کے مطابق مقتولین کی شناخت ڈاکٹر فصیح عثمانی اور کامران کے نام سے ہوئی ہے۔

پولیس کا کہنا ہے کہ مقتولین کو باقاعدہ منصوبہ بندی کے تحت قتل کیا گیا ہے، قاتلوں نے گھر میں کسی بھی سامان کو ہاتھ نہیں لگایا۔

گھر میں رہائش پذیر مقتول ڈاکٹر فصیح کی والدہ اور بیوی واقعہ کے وقت واک کے لیے گھر سے باہر تھیں، پولیس کی جانب سے جائے حادثہ سے مزید شواہد اکٹھے کیے جارہے ہیں۔

پولیس کے مطابق واردات کے وقت دونوں باپ بیٹے سوئے ہوئے تھے، ایس ایس پی انویسٹی گیشن طارق دھاریجو کا کہنا ہے کہ قتل میں کوئی گھر کا بھیدی ملوث لگتا ہے۔

ذرائع کا کہنا ہے کہ مقتولین کراچی سے امریکا منتقل ہونے کی تیاری کررہے تھے۔

پولیس کے مطابق مقتول فصیح عثمانی کراچی کے متعدد میڈیکل کالجز میں تدریس کے فرائض انجام دیتے رہے ہیں، ایک سال قبل ہی ان کے بڑے بیٹے کا انتقال ہوا تھا، ان کے ساتھ قتل کیے جانے والا بیٹا کامران امریکا میں مقیم تھا اور دو ماہ قبل ہی کراچی آیا تھا۔

دہرے قتل کی واردات کا مقدمہ مقتول فصیح عثمانی کی اہلیہ کی مدعیت میں کلفٹن تھانے میں درج کرلیا گیا، مقدمہ قتل کی دفعہ کے تحت نامعلوم ملزمان کے خلاف درج کیا گیا ہے۔

اہلیہ کا کہنا ہے کہ صبح چھ بجے گھر سے واک کرنے گئی تھی، واپس آئی تو دیکھا کہ گھر کا مرکزی دروازہ بند تھا، دروازہ نہ کھلنے پر عقبی دروازے سے اندر گئی تو فرش پر خون لگا پایا۔

مقتول کی اہلیہ کے مطابق کمرے میں گئی تو دیکھا بیٹے کی لاش بیڈ پر اور شوہر کی فرش پر پڑی تھی، خوفزدہ ہوکر گھر سے باہر نکل آئی، پڑوسی نے پولیس کو اطلاع دی۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں