The news is by your side.

Advertisement

کراچی، پی ایس پی کے دفتر پر فائرنگ، 2 افراد جاں بحق، 2 زخمی

کراچی: شہر قائد کے علاقے ناظم آباد میں پاک سرزمین پارٹی کے ٹاؤن آفس پر نامعلوم افراد نے فائرنگ کردی جس کے نتیجے 2 افراد جاں بحق اور 2 زخمی ہوگئے۔

تفصیلات کے مطابق کراچی کے علاقے ناظم آباد میں پاک سرزمین پارٹی کے دفتر پر فائرنگ کے نتیجے میں 2 افراد جاں بحق اور 2  زخمی ہوگئے، رینجرز اور پولیس نے علاقے کو گھیرے میں لے لیا۔

فائرنگ سے زخمی ہونے والوں کو طبی امداد کے لیے عباسی شہید اسپتال منتقل کردیا گیا جہاں اظہر اور نعیم زخموں کی تاب نہ لاتے ہوئے دم توڑ گئے، دیگر زخمیوں کی شناخت فہد، ناصر کے ناموں سے ہوئی ہے۔

اسپتال انتظامیہ نے بھی اظہر نامی شخص کے ہلاک ہونے کی تصدیق کردی ہے۔

نمائندہ اے آر وائی نیوز رافع حسین کے مطابق فائرنگ سے علاقے میں خوف و ہراس پھیل گیا جبکہ رینجرز اور پولیس نے علاقے کو گھیرے میں لے کر تحقیقات کا آغاز کردیا ہے۔

نمائندہ اے آر وائی نیوز کے مطابق اس وقت وہاں موجود افراد کو جائے وقوعہ سے ہٹایا جارہا ہے اور شواہد اکٹھے کیے جارہے ہیں۔

عینی شاہدین کے مطابق دو موٹر سائیکل پر چار نامعلوم افراد آئے جنہوں نے اندھا دھند فائرنگ کردی۔

تفتیشی ٹیم کا کہنا ہے کہ فائرنگ کے واقعے میں نائن ایم ایم پستول استعمال ہوا ہے، جائے وقوعہ سے نائن نائن ایم کے 11 خول ملے ہیں۔

تفتیشی ٹیم کے مطابق فرانزک سے پتہ چلے گا ہتھیار پہلے کبھی استعمال ہوا ہے یا نہیں جبکہ علاقے میں لگے سی سی ٹی وی کیمروں سے مدد لی جائے گی۔

ایڈیشنل آئی جی کراچی نے ناظم آباد میں فائرنگ کا نوٹس لے لیا، امیر شیخ نے ایس ایس پی سینٹرل سے واقعے کی رپورٹ طلب کرلی۔

مصطفی کمال کا ردعمل

پاک سرزمین پارٹی کے چیئرمین مصطفی کمال نے عباسی شہید اسپتال کے باہرمیڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ 23 اگست کو ایم کیو ایم پاکستان بنانے والے واقعے کے ذمہ دار ہیں۔

انہوں نے کہا کہ ہمارے کارکنوں پر حملہ بزدلانہ کارروائی ہے، وفاق، سندھ حکومت سے مطالبہ ہے کہ واقعے کا نوٹس لیں، ہم کسی کو نقصان نہیں پہنچا رہے ہیں، ہمیں اپنی سمت درست کرنے کی ضرورت ہے۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں