The news is by your side.

Advertisement

سابق بلدیاتی نمائندوں سے سرکاری گاڑیاں واپس نہ لی جا سکیں

کراچی: سابق بلدیاتی نمائندوں سے سرکاری گاڑیاں واپس نہ لی جا سکیں، ان کے خلاف سرکاری گاڑیاں واپس نہ کرنے پر مقدمات بھی درج نہیں کیے جا سکے۔

تفصیلات کے مطابق کراچی کےسابق بلدیاتی نمائندوں سے سرکاری گاڑیوں کی ریکوری کے معاملے میں ڈھائی ماہ بعد بھی حکومتی احکامات پر عمل درآمد نہ ہو سکا۔

6 اضلاع کے ایڈمنسٹریٹرز نے حکومتی احکامات ہوا میں اڑا دیے، ایڈمنسٹریٹرز کو 16 اکتوبر کو گاڑیوں کی واپسی کی ہدایت کی گئی تھی۔

گاڑیاں واپس نہ کرنے والوں کے خلاف مقدمے کا اندراج بھی نہیں کیا جا سکا، ریجنل ڈائریکٹر لوکل گورنمنٹ نے ڈیڑھ ماہ قبل مقدمے کے احکامات دیے تھے۔

بلدیاتی نمائندوں سے گاڑیاں فوری واپس لینے کا حکم جاری

معلوم ہوا ہے کہ بعض بلدیاتی نمائندوں کی جانب سے واپس کی گئی سرکاری گاڑیوں پر ضلعی انتظامیہ قابض ہو گئی ہے، سابق چیئرمین ضلع وسطی اور شرقی کی سرکاری گاڑیاں سینٹرل وہیکل پول نہ پہنچ سکیں۔

ذرایع محکمہ بلدیات کا کہنا ہے کہ سابق چیئرمین ضلع ملیر اور جنوبی سے سرکاری گاڑیاں ریکور نہ ہو سکیں، ضلع غربی اور کورنگی سے بھی سرکاری گاڑیاں واپس نہیں کی گئیں۔

واضح رہے کہ 3 رکنی 6 کمیٹیوں کو ایک ہفتے میں گاڑیوں کی ریکوری کا ٹاسک دیاگیا تھا۔

Comments

یہ بھی پڑھیں