The news is by your side.

Advertisement

کراچی : جھگیوں پر مٹی کا تودہ گرنے سے 13افراد جاں بحق

کراچی : گلستان جوہر میں مٹی کا تودہ گرنے سے ملبے تلے دب کر، سات بچوں اور تین خواتین سمیت تیرہ افراد جاں بحق ہوگئے.

تفصیلات کے مطابق کراچی کے علاقے گلستان جوہر میں جھگیوں کے مکین رات کو بے خبر سورہے تھے کہ مَنوں وزنی مٹی کے تودے جھگیوں پر آگرے۔ جس کے نتیجے میں متعدد افراد ملبے تلے دب گئے، خواتین اور بچوں سمیت تیرہ افراد کی لاشیں نکال لی گئیں ہیں، جاں بحق افرادمیں آٹھ کا تعلق بہاولپور اورپانچ کا رحیم یارخان سے تھا۔

حادثے کے فوری بعد علاقہ مکین اپنی مدد آپ کے تحت امدادی کاموں میں لگ گئے لیکن ہیوی مشینری کی عدم موجودگی اور رکاوٹوں کے باعث امدادی
کارروائیوں میں مشکلات کا سامنارہا۔

افسوسناک واقعے کے عینی شاہد نے بتایا کہ پہاڑی سے مسلسل مٹی گررہی تھی کہ اچانک تودہ جگیوں پرآن گرا۔

اے آروائی نیوز کی نشاندہی پر انتظامیہ کو ہوش آیا اور کمشنر کراچی شعیب احمد صدیقی ہیوی مشینری کے ساتھ خود جائے وقوع پر پہنچ گئے، اس موقع پر ان کا کہنا تھا کہ شہر بھر کے ریسکیو اداروں کو الرٹ کردیا گیا ہے، ملبے تلے دبے افراد کو نکالنے کیلئے امدادی کارروائیاں جاری ہیں، رینجرز اہلکار بھی ریسکیو ٹیموں کے ساتھ امدادی کاموں میں مصروف ہیں۔

گلستان جوہر سانحے کی تحقیقات کے لئے ٹیم تشکیل

ایڈیشنل آئی جی کراچی مشتاق مہر نے گلستان جوہر سانحے کی تحقیقات کے لئے ٹیم تشکیل دیدی، جس کی سربراہی ڈی آئی جی ایسٹ کریں گے، کمشنر کراچی حادثے کے فوری بعد امدادی کاموں کی نگرانی کے لیے پہنچے، انکا کہنا تھا کہ رینجرز سمیت تمام امدادی ٹیموں نے بھرپور محنت کی۔

ایس ایس پی ایسٹ جاوید جسکانی کا کہنا تھا کہ حادثے کی تفتیش کے بعد مقدمے کی نوعیت کا فیصلہ ہوگا کہ مقدمہ کس سیکشن کے تحت درج کیا جائے، ایک درجن سے زائد لوگ لقمہ اجل بنے ہیں، کارروائی ضرور ہوگی، واقعے کی مکمل چھان بین کی ضرورت ہے۔

ایس ایس پی ایسٹ نے شبہ طاہر کیا ہے ہےجائےحادثہ والی جگہ چائنا کٹنگ میں شامل ہے، زمین کی ملکیت کے دو دعوےدار سامنے آئےہیں ، متاثرہ خاندان 3پلاٹوں پر آباد تھا، ایک پلاٹ پرائیوٹ آدمی ، دوسرا پولیس افسر اور تیسرا کے ڈی اے کے افسر کا ہے۔

Print Friendly, PDF & Email

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں