site
stats
سندھ

بلدیاتی نمائندوں کامیئرکراچی کے ہمراہ سندھ اسمبلی کے باہرمظاہرہ

مئیر کراچی وسیم اختر نے کہا ہے کہ سندھ حکومت کراچی کو پلاننگ کے تحت تباہ کر رہی ہے۔ بجٹ میں کراچی کے لئے کچھ نہیں رکھا گیا ہے، پُرامن احتجاج ہمارا جمہوری حق ہے۔

ان خیالات کا اظہار انہوں نے سندھ اسمبلی کے باہر بلدیاتی نمائندوں کے ہمراہ احتجاجی مطاہرے سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔ احتجاج کے وقت سندھ اسمبلی کا اجلاس جاری تھا۔

میئر کراچی وسیم اختر نے کہا کہ سندھ اسمبلی کے دروازے بند کردئیے گئے ہیں۔ سندھ حکومت اتنی ڈری ہوئی ہے کہ احتجاج بھی نہیں کرنے دیتی۔ آج ہمیں تالےلگائےجا رہےہیں، کل تالے لگانے والوں کو تالےلگیں گے۔

اس موقع پر سندھ اسمبلی میں ایم کیوایم پاکستان کے اراکین نے بھی اجلاس سے واک آؤٹ کیا، اپوزیشن لیڈر خواجہ اظہارالحسن کا کہنا تھا کہ ہمارا مئیر احتجاج کرےاور ہم تقاریرسنیں ایسا نہیں ہو سکتا۔

اجلاس سے واک کرتے ہوئے اپوزیشن اراکین نے سندھ اسمبلی میں”شرم کرو ، حیا کرو، ڈوب مرو، ڈوب مرو”کے نعرے لگائے۔

بعد ازاں سندھ اسمبلی کے باہر بلدیاتی نمائندوں نےاحتجاج ختم کردیا، میئر کراچی وسیم اختر نے صحٓفیوں کو بتایا کہ نماز جمعہ کےباعث احتجاجی مظاہرہ ختم کررہےہیں، احتجاجی مظاہروں کاسلسلہ آج سےشروع کیاہے۔

Print Friendly, PDF & Email
20

Comments

comments

اس ویب سائیٹ پر موجود تمام تحریری مواد کے جملہ حقوق@2018 اے آروائی نیوز کے نام محفوظ ہیں

To Top