کراچی سے سوتیلی ماؤں جیسا سلوک ہورہا ہے، وسیم اختر -
The news is by your side.

Advertisement

کراچی سے سوتیلی ماؤں جیسا سلوک ہورہا ہے، وسیم اختر

کراچی : اسیر میئر کراچی وسیم اختر کا کہنا ہے کہ کراچی سے سوتیلی ماؤں جیسا سلوک ہورہا ہے، جیل سے نکل کر کراچی کے لیے نیا لائحہ عمل دوں گا۔

تفصیلات کے مطابق اڑتیس مقدمات میں ضمانت ملنے پر وسیم اختر نے رہائی کا خواب دیکھنا شروع کردیا، انسداد دہشتگردی عدالت میں پیشی پر صحافیوں سے گفتگو وسیم اختر کا کہنا ہے کہ اللہ کا شکر ہے 39کیس تھے 38کیس میں ضمانت مل چکی ہے، عدلیہ پر شروع سے بھروسہ تھا، اب صرف ایک کیس میں ضمانت ملنا باقی ہے۔

اسیر میئر کراچی نے کہا کہ کراچی کے ساتھ سوتیلی ماؤں جیسا سلوک ہورہا ہے، جیل سے نکل کر مشترکہ طور پر میٹینگ رکھو گا اور کراچی کے لیے نیا لائحہ عمل تیارکروں گا، ہم سب مل کر کراچی کیلئے کام کریں گے۔

انھوں نے کہا کہ مراد علی شاہ سی ایم ہے اگر شہر کراچی ترقی کریگا تو ان کے لئے بھی فائدہ ہوگا۔

وسیم اختر نے نئے گورنر جسٹس (ر) سعید الزماں صدیقی کو اچھا انسان قرار دیتے ہوئے کہا انکے ساتھ کام کا تجربہ ہے۔

صحافی نے پرویز مشرف کے ایم کیو ایم پاکستان کے سربراہ بننے سے متعلق سوال کیا تو وسیم اخترکا کہنا تھا کہ میری پارٹی کے سربراہ فاروق ستار ہے اور وہ اس بات کا جواب دے چکے ہیں۔


مزید پڑھیں : ایک اور مقدمے میں کراچی میئر وسیم اختر کی ضمانت منظور


اس سے قبل کراچی کی انسدادِ دہشت گردی عدالت نے اشتعال انگیز تقریر کیس میں وسیم اختر کی ضمانت منظور کرتے ہوئے پچیس ہزار روپے کے مچلکے جمع کرانے کا حکم دیا۔

واضح رہے کہ خیال رہے کہ میئر کراچی وسیم اختر کے خلاف اشتعال انگیز تقاریر اور سانحہ 12 مئی سمیت 39 مقدمات درج ہیں جن میں سے 38 میں ان کی ضمانت ہو چکی ہے۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں