The news is by your side.

Advertisement

مروہ زیادتی اورقتل کیس : زیرحراست مشتبہ افراد کی جیو فینسگ جاری

کراچی : پولیس کا کہنا ہے کہ مروہ زیادتی اورقتل کیس میں زیرحراست مشتبہ افراد کی جیوفینسگ جاری ہے ، جس سےملزمان کی مختلف مقام پرموجودگی کاپتہ چلےگا۔

تفصیلات کے مطابق کراچی میں مروہ زیادتی اورقتل کیس کی تفتیش جاری ہے ، پولیس کا کہنا ہے کہ زیرحراست مشتبہ افراد کی جیوفینسگ کی جارہی ہے، جیو فینسنگ سےزیر حراست ملزمان کی مختلف مقام پرموجودگی کاپتہ چلےگا۔

پولیس کا کہنا تھا کہ زیر حراست سب سےزیادہ مشکوک شخص سے تفتیش جاری ہے ، مشتبہ شخص نواز کچھ دیر بعد اپنا بیان تبدیل کر دیتا ہے ، زیر حراست شخص اب تک کسی بھی سوال کا مثبت جواب نہیں دے سکا۔

پولیس نے مزید بتایا کہ تمام ثبوت زیر حراست شخص کے خلاف ہیں، ڈی این اے رپورٹ کا انتظار کر رہےہیں، ملزم نے ڈی این اے رپورٹ سے پہلے اعتراف کیاتو کارروائی کی جائے گی۔

مزید پڑھیں : ننھی مروا قتل کیس، 15 سے زائد مشتبہ افراد گرفتار

پولیس کی جانب سے تمام مشتبہ افراد کا ڈی این اے کرالیا گیا ہے اور تحریری بیانات بھی ریکارڈ کرلیے گئے ہیں، گرفتار تمام افراد بچی کے گھرکےاطراف رہنےوالےلوگ ہیں ۔

پولیس کا کہنا تھا کہ زیر حراست افراد کرایے کے گھروں میں بغیر فیملی رہائش پذیر ہں ، سب سے زیادہ مشکوک شخص نوازکی جدید خطوط پرتفتیش کی جارہی ہے، نواز کے دو بیٹے بھی پولیس کی حراست میں ہیں، ڈی این اے رپورٹ میں مزید کئی روز لگ سکتے ہیں۔

یاد رہے پی آئی بی کالونی کی رہائشی 5 سالہ بچی دو روز قبل گھر سے بسکٹ لینے نکلی تھی، جہاں مروہ اغوا کرلیا گیا تھا جس کی لاش دو روز بعد کچرا کنڈی سے برآمد ہوئی، بچی کی ہلاکت پر سوشل میڈیا پر ’جسٹس فار مروہ‘ کے نام سے ٹاپ ٹرینڈ بن گیا، جس میں قاتلوں کی گرفتاری کا مطالبہ کیا گیا۔

بعد ازاں قتل ہونے والی ننھی مروہ کے ساتھ زیادتی کی تصدیق ہوگئی ، ڈاکٹر ذکیہ کا کہنا ہے کہ بچی کو زیادتی کے بعد سر پر پتھرمار کر قتل کیاگیا۔

Comments

یہ بھی پڑھیں