The news is by your side.

Advertisement

کراچی پولیس نے خاتون اریبہ کے قتل کا مقدمہ درج کرلیا

کراچی : پولیس نے محمودآباد میں خاتون اریبہ کے قتل کامقدمہ درج کرلیا، جس میں گرفتار شوہر شمشاداوراس کے دوست کو نامزد کیا گیا ہے، جو پولیس کی زیر حراست ہیں۔

تفصیلات کے مطابق کراچی کے علاقے محمود آباد میں خاتون کی پرسرار موت کے بعد بلوچ کالونی پولیس نے خاتون اریبہ کےقتل کا مقدمہ درج کرلیا،والدہ کی مدعیت میں درج مقدمے میں شوہر شمشاد اور اس کے دوست سعید کو نامزد کیا گیا ہے۔

والدہ کا کہنا ہے کہ 3ماہ پہلے شمشاد سے بیٹی کی دوسری شادی کی مخالف تھی ، میرا داماد اچھے کردار کا مالک نہیں تھا،اطلاع ملنے پرگئی تو بیٹی کی لاش بیڈ پر تھی، بیٹی کی گردن اورجسم پرزخموں کے نشانات تھے، بیٹی کو داماد اور اسکے دوست نے قتل کیا۔

پولیس کے مطابق خود کشی کی اطلاع پر پہنچے توحالات واقعات کچھ اور بتا رہے تھے ، شوہرشمشاد کی گرن پرنشانات تھےپوچھنےپروہ کچھ نہیں بتاسکا ، بیڈ اور پنگھے کے درمیان اتنا فاصلہ نہیں تھا کہ کوئی خود کشی کرسکے۔

پولیس نے گھر کی تلاشی کے دوران پھندا برآمد کرلیا جبکہ گھر سے شراب کی ثابت اور ٹوٹی ہوئی بوتلیں بھی ملی ہے۔

پولیس حکام کے مطابق محمود آباد کے علاقے میں اریبہ نامی خاتون کی پھندا لگی لاش ملی ابتدائی طور پرواقعہ کو خودکشی بتایا گیا تاہم واقعاتی شواہد اور مرنے والی خاتون اریبہ کے والدین کے الزامات کے بعد اریبہ کے شوہرشمشاداور اس کے دوست سعد کوحراست میں لیکر پوچھ گچھ شروع کردی اور لاش کو پوسٹ مارٹم کیلئے جناح اسپتال منتقل کیا گیا۔

پوسٹ مارٹم کرنے والی خاتون ایم ایل او جناح اسپتال ڈاکٹر زکیہ نے بتایا کہ خاتون کا پوسٹ مارٹم مکمل کرلیا گیا ہے متوفیہ کے جسم پر تشدد کے پرانے نشانات موجود تھے لیکن جسم پرتشدد کے تازہ نشانات نہیں پائے گئے۔

ڈاکٹر زکیہ کا کہنا تھا کہ واقعی خودکشی ہے یا قتل کہنا قبل از وقت ہے کیمیکل ایگزامن کے لئے نمونے حاصل کرلئے ہیں جس کی رپورٹ چوبیس گھنٹوں بعد موصول ہوگی ، رپورٹ آنے کے بعد خودکشی یا قتل کا فیصلہ ہوسکے گا۔

بعد ازاں ضابطے کی کاروائی کے بعد خاتون کی لاش ورثا کے حوالے کردی گئی۔

اریبہ کے والدین نے میڈیا سے گفتگو میں کہا کہ ان کی بیٹی کو قتل کرکے قتل کو خودکشی کا رنگ دینے کی کوشیش کی گئی اریبہ کے شوہر نے اطلاع دی کی اریبہ کی طبعیت خراب ہے آپ لوگ آجائیں، ہمارے گھر پہنچنے تک مرنے کی اطلاع نہیں تھی جب گھر پہنچے تو اریبہ کی لاش بیڈ پر رکھی تھی۔

والدین کا کہنا تھا کہ بیٹی نے گزشتہ روز حلوہ کھانے کی خواہش کا اظہار کیا تھا، میری بیٹی خودکشی نہیں کرسکتی ہمارا مطالبہ ہے کہ ہمیں انصاف فراہم کیا جائے۔

Comments

یہ بھی پڑھیں