The news is by your side.

Advertisement

شہر میں جرائم کی وارداتوں میں کمی آئی ہے: کراچی پولیس کا دعویٰ

کراچی: صوبہ سندھ کے دارالحکومت کراچی کی پولیس کا کہنا ہے کہ شہر میں جرائم کی وارداتوں میں کمی آئی ہے۔ 2 روز قبل ہی لوٹ مار کی واردات کے دوران حاملہ خاتون پر فائرنگ کی گئی ہے۔

تفصیلات کے مطابق کراچی پولیس نے شہر قائد میں جرائم کے حوالے سے رپورٹ جاری کردی، رپورٹ میں کراچی کے آٹھوں ڈسٹرکٹس کا ڈیٹا شامل ہے۔

رپورٹ میں کہا گیا کہ شہر میں موبائل فون چھیننے کی وارداتوں میں کمی واقع ہوئی، مارچ میں تمام ڈسٹرکٹس سے 2 ہزار 416 موبائل فون چھینے گئے جبکہ اپریل میں یہ تعداد 2 ہزار 118 رہی۔

رپورٹ کے مطابق مارچ میں 206 جبکہ اپریل میں 183 کاریں چوری ہوئیں، مارچ میں 408 اور اپریل میں 346 موٹر سائیکلیں چھینی گئی۔

مجموعی طور پر مارچ میں 7 ہزار 316 شہریوں سے چھینا جھپٹی ہوئی جبکہ اپریل میں لٹنے والے شہریوں کی تعداد 6 ہزار 628 رہی۔ مارچ کی نسبت اپریل میں 700 کم وارداتیں ہوئیں۔

کراچی پولیس کا کہنا ہے کہ جرائم پیشہ عناصر کے خلاف کارروائیاں جاری ہیں۔

خیال رہے کہ کراچی پولیس کی رپورٹ کے برعکس شہر میں عید الفطر کی تعطیلات کے دوران چور ڈاکو بے لگام رہے۔

عید کے تیسرے روز نیو کراچی میں ڈاکوؤں نے ڈکیتی کے دوران حاملہ خاتون پر فائرنگ کردی، فائرنگ سے بچہ پیٹ میں ہی دم توڑ گیا جبکہ خاتون کی حالت نازک ہے۔

Comments

یہ بھی پڑھیں