The news is by your side.

Advertisement

کراچی میں ٹینکر اور بس نے طالبہ سمیت 4 افراد کو کچل ڈالا

کراچی میں ایک ہی دن میں ٹریفک حادثات میں طالبہ سمیت 4 افراد جاں بحق ہوگئے۔

اے آر وائی نیوز کے مطابق کراچی کے علاقے یونیورسٹی روڈ پر بے قابو ٹینکر نے طالبہ سمیت دو راہگیروں کو کچل ڈالا، اردو یونیورسٹی کے قریب تیز رفتار بس کی ٹکر سے نوجوان علی حیدر موقع پر ہی جاں بحق ہوگیا۔

پولیس کا کہنا ہے کہ جامعہ اردو کے قریب ٹریفک حادثے کے ذمہ دار کار ڈرائیور کو حراست میں لے لیا گیا ہے، ایک بس اور کار بھی تحویل میں لے لی گئی ہے۔

پولیس کے مطابق علی حیدرکار کی ٹکر سے سڑک پر گرا، پیچھے سے آںے والی بس نے رونڈ ڈالا، حادثے کے فوری بعد بس کا ڈرائیور فرار ہوگیا، نوجوان کی لاش کو ضابطے کی کارروائی کے لیے اسپتال منتقل کردیا گیا ہے۔

ایکسپو سینٹر کے قریب حادثے میں جاں بحق ہونے والی طالبہ عائشہ کو ان کے والد کراچی یونیورسٹی چھوڑنے جارہے تھے۔

مزید پڑھیں: کراچی : ایکسپو سینٹر کے سامنے ٹینکر نے جامعہ کراچی کی طالبہ کو کچل ڈالا

ادھر کورنگی انڈسٹریل ایریا کے قریب تیز رفتار مسافر بس نے سگے بھائیوں کو کچل ڈالا، دونوں بھائیوں کی شناخت بابر اور احمر کے ناموں سے ہوئی۔

دونوں بھائی ویٹا چورنگی پر فیکٹری میں ملازمت کرتے تھے، ساتھیوں کے مطابق بابر اور احمر فیکٹری کام پر آرہے تھے کہ حادثہ پیش آیا۔

شہریوں کا کہنا ہے کہ ان علاقوں میں ٹینکر، کوچز، ہیوی گاڑیوں کے ڈرائیور بہت اسپیڈ میں گاڑی چلاتے ہیں اور ٹریفک پولیس کی جانب سے کوئی کارروائی نہیں کی جاتی۔

واضح رہے کہ اس سے قبل بھی کراچی کے مختلف علاقوں میں ٹینکروں کی زد میں آکر نوجوان اپنی قیمتی جانوں سے ہاتھ دھو بیٹھے ہیں۔

Comments

یہ بھی پڑھیں