The news is by your side.

Advertisement

جامعہ کراچی دھماکا: خصوصی ویڈیوز اور تصاویر دیکھیں

جامعہ کراچی میں ہونے والے خودکش دھماکا کی خصوصی ویڈیوز اور تصاویر اے آر وائی نیوز نے حاصل کر لیں۔

خودکش بمبار خاتون شاری بلوچ اور شوہر ہیبتان بلوچ نے دھماکے سے قبل شادی کی سالگرہ منائی۔ سالگرہ کی وڈیو میں دونوں کو گنگناتے، ہنستے اور غبارے پھاڑتے دیکھا جاسکتا ہے۔

خاتون بمبار شاری بلوچ دھماکے سے ایک روز قبل بھی جائے واردات پر موجود تھی ٹھیک 2 بج کر 8 منٹ پر گاڑی کو کنفیوشز انسٹی ٹیوٹ میں داخل ہوتے دیکھا جاسکتا ہے خاتون خودکش بمبار ٹھیک اسی مقام پر کھڑی تھی لیکن نے اس نے دھماکا نہیں کیا۔

خاتون خودکش بمبار نے گاڑی میں جھانک کر بھی دیکھا تھا خودکش بمبار کا ہدف چائنیز انسٹی ٹیوٹ کے ڈائرکٹر تھے جو اس روز گاڑی میں نہیں تھے دھماکے والے روز شاری بلوچ دہلی کالونی والے فلیٹ سے روانہ ہوئی۔

دھماکے والے روز خاتون بمبار رکشے میں سلور جوبلی گیٹ سے داخل ہوئی رکشے کے آگے ایک سفید رنگ کی مشکوک گاڑی چلتی رہی وہ گاڑی جامعہ کراچی میں داخل ہونے کے بعد رکشے کے آگے آگے چلتی رہی خاتون بمبار موقع پر پہنچ کر رکشے سے اتری اور “لاسٹ منٹ ہینڈلر لیڈی” سے ملی، بمبار نے اسے موبائل فون بھی حوالے کیا۔

یہ موبائل فون شاری بلوچ کو ممکنہ طور پر اسی کام کے لیے دیا گیا تھا خاتون ہینڈلر وہ موبائل لے کر کسی سے بات کرتے ہوئے آئی بی اے کی جانب گئی وہاں سے ممکنہ طور پر ایک بس میں بیٹھ کر فرار ہوگئی۔

شاری بلوچ کو بیگ پیک میں بم بنا کر دیا گیا بم کہیں باہر بھی اس کے حوالے کیا گیا بم میں انڈسڑیل ایکسپلوزو کے علاوہ فاسفورس کا استعمال بھی کیا گیا، دھماکے کے بعد شاری بلوچ کے دہلی کالونی والے گھر سے کئی کتابیں ملی ان میں ایک ہندو سنسکرتی کی بھی کتاب تھی۔

گلستان جوہر والے فلیٹ میں وہ مارچ تک رہتی رہی وہاں وہ اپنے شوہر کے ساتھ گھنٹوں فلیٹ کاریڈور میں بیٹھی باتیں کرتی رہتی اس نے اپنی بیٹی کا قریبی اسکول میں داخلہ بھی کروایا لیکن 6 ماہ تک فیس جمع نہ کروائی۔

Comments

یہ بھی پڑھیں