The news is by your side.

Advertisement

کرتار پور راہداری مذاکرات: پاکستانی وفد شرکت کرے گا، بھارت نے مقام تبدیل کردیا

اسلام آباد: دفتر خارجہ نے تصدیق کی ہے کہ کرتار پور راہداری پاکستان اور بھارت کے درمیان مذاکرات 14 مارچ کو اٹاری کے مقام پر ہوں گے۔

دفتر خارجہ کے ترجمان ڈاکٹر فیصل کا کہنا تھا کہ کرتارپورراہداری سے متعلق بات چیت کی تاریخ نہیں بلکہ مقام تبدیل کیا گیا، پہلے دونوں ممالک کے حکام کو نئی دہلی میں ملاقات کرنا تھی جس پر بھارت نے رضامندی ظاہر نہیں کی تو مقام کو تبدیل کیا گیا۔

اطلاعات کے مطابق پاکستان وفد کی قیادت دفتر خارجہ کے ترجمان ڈاکٹر فیصل کریں گے، پاکستانی وفد 14 مارچ کو بات چیت کے بعد وطن واپس لوٹے گا۔

ذرائع کے مطابق پاک بھارت مذاکرات میں کرتارپور راہداری کھولنےپربات چیت ہوگی، بھارت کے سرحدی علاقے اٹاری میں ہونے والے مذاکرات صبح نوسے شام پانچ بجے تک جاری رہیں گے۔ بعد ازاں پاکستانی وفد واہگہ بارڈر پر مذاکراتی پیشرفت سےآگاہ کرےگا۔

مزید پڑھیں: کرتارپور راہداری: پاکستانی وفد بات چیت کے لیے 14 مارچ کو نئی دہلی جائے گا

قبل ازیں دفتر خارجہ کے ترجمان کی جانب سے 6 مارچ کو اعلامیہ جاری کیا گیا تھا جس میں بتایا گیا تھا کہ پاکستان اور بھارت کے مابین کرتار پور راہداری پر  وفود کے تبادلے پر اتفاق ہوا جس کے تحت مذاکرات کا پہلا سیشن 14 مارچ کو ہوگا۔

دفتر خارجہ کے ترجمان کا کہنا تھا کہ دوسرے مرحلے میں بھارت کا وفد 28 مارچ کو واہگہ کے راستے پاکستان پہنچے گا۔اُن کا کہنا تھا کہ قائم مقام بھارتی ہائی کمشنر اور  دفتر خارجہ کو پاکستان کی جانب سے مذاکرات کی دعوت دی گئی ہے۔

یاد رہے کہ 7 فروری کو پاکستان نے کرتارپور راہ داری کے سلسلے میں بھارت کو مذاکرات کی پیش کش کرتے ہوئے 2 تاریخیں دی تھیں جس پر بھارت نے بھی مثبت جواب دیا۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں