The news is by your side.

Advertisement

کشمیریوں سے اظہاریکجہتی کا دن، اسلام آباد میں آج انسانی ہاتھوں کی زنجیر بنائی جائے گی

اسلام آباد : مظلوم کشمیریوں سے اظہار یکجہتی کے دن آج اسلام آبادمیں انسانی ہاتھوں کی زنجیر بنائی جائے گی، وزیراعظم عمران خان بھی اس میں شامل ہوں گے۔

تفصیلات کے مطابق قابض بھارتی فوج کے ظلم کا سامنا کرتے مظلوم کشمیریوں سے اظہار یکجہتی کے لیے آج اسلام آباد میں ہاتھوں کی زنجیر بنائی جائے گی، وزیراعظم عمران خان ایکسپریس چوک سے ڈی چوک تک بنائی جانے والی اس انسانی زنجیرکاحصہ ہوں گے۔

معاون خصوصی برائے اطلاعات فردوس عاشق اعوان نے کہا ہے کہ وزیراعظم کی ہدایت پر قابض بھارتی فوج کے ظلم کا شکار کشمیریوں کی یکجہتی کا اظہار کرنے کے لیے جمعہ کی سہ پہر تین بجے ایکسپریس چوک سے ڈی چوک تک انسانی زنجیر بنائی جائے گی۔

فردوس عاشق اعوان کا کہنا تھا کہ وزیراعظم عمران خان ہر محاذ پر کشمیریوں کے جائزجمہوری، قانونی حق کے لیے ڈٹ کر کھڑے ہیں، تمام طبقات سے تعلق رکھنے والے افراد مظاہرے میں شرکت کریں گے۔

مزید پڑھیں : کشمیریوں سے اظہار یکجہتی، حکومت پاکستان کا کل انسانی ہاتھوں‌ کی زنجیر بنانے کا اعلان

یاد رہے وزیراعظم عمران خان نے حال ہی میں ہونے والے اقوام متحدہ کے اجلاس میں کشمیر کی صورتحال سے دنیا کو آگاہ کیا تھا اور بتایا تھا کہ مودی سرکار نے وہاں ظلم کو بربریت مچا رکھی ہے۔

وزیراعظم عمران خان نے کشمیریوں کو یقین دہانی کرائی ہے کہ وہ اُن کے سفیر کی حیثیت سے دنیا بھر میں ظلم کے خلاف آواز کو بلند کریں گے اور ہر فورم پر اس مقدمے کو پیش بھی کریں گے۔

خیال رہے بھارتی حکومت جانب سے مقبوضہ کشمیر کی خصوصی حیثیت ختم کرنے کے بعد حکومت نے جمعے کشمیریوں سے اظہاریکجہتی کے دن سے منسوب کردیا ہے ، اس دن کشمیریوں سے اظہار یکجہتی کرتے ہوئے ریلیوں کا اہتمام کیا جاتا ہے۔

واضح رہے مقبوضہ کشمیر میں کرفیو کا اڑسٹھ واں روزہوگیا ہے ، وادی میں مسجدیں بند ہیں، شہری دکانیں، بزنس، تعلیمی ادارے اور پبلک ٹرانسپورٹ سے محروم ہیں۔

مسلسل کرفیو نافذ کے باعث گھروں میں قید کشمیریوں کے پاس کھانا پینا ختم ہوگیا، سری نگر کے اسپتال میں ڈاکٹرز کا کہنا ہے کہ کرفیو کی وجہ سے مریض ہسپتال نہیں پہنچ پا رہے، اب تک درجنوں بیمار افراد اپنی جانیں گنوا چکے ہیں، ادویات کی قلت اور پابندیوں کی وجہ سے پچاس فیصد آپریشن تعطل کا شکار ہیں۔

مقبوضہ کشمیر میں انسانی الیمہ تیزی سے بڑھ ر ہا ہے کشمیری رہنماوں ، کشمیری نوجوان سمیت بچے بھی جیلوں میں قید ہیں جبکہ بھارتی فورسزکے مظالم کیخلاف نماز جمعہ کے بعد احتجاج کیا جائے گا۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں