The news is by your side.

Advertisement

کشمیرمیں بھارتی بربریت کیخلاف کراچی سے خیبر تک عوام سراپا احتجاج

کراچی / لاہور / پشاور / کوئٹہ : مقبوضہ کشمیر میں بھارتی بربریت کے خلاف کراچی سے خیبر تک شدید احتجاج کا سلسلہ ملک کے مختلف شہروں میں جاری ہے۔ کہیں بھارتی وزیراعظم کے پتلے جلائے گئے تو کہیں شہداء کشمیر کی غائبانہ نماز جنازہ ادا کی گئی، تفصیلات کے مطابق مقبوضہ کشمیر میں بھارتی فوج کے ہاتھوں نہتے کشمیریوں کی شہادت پر کراچی سے خیبر تک عوام سراپا احتجاج ہیں۔ آزاد کشمیر کے عوام نے ریلی نکالی اور یو این مبصر مشن کو یاد داشت پیش کی گئی۔

1

کراچی کے مختلف مقامات پر بھی کشمیریوں سے اظہار یکجہتی کیا گیا، بھارتی مظالم اورمدینہ منورہ میں حالیہ دہشت گردی کے خلاف اور حرمین شرفین کے تحفظ کے لئے احتجاجی مظاہرے کئے گئے اور ریلیاں نکالی گئی۔جن میں ہزاروں افراد نے شرکت کی اور اپنے جذبات کا اظہار کیا۔

2

امیر جماعت اسلامی پاکستان سینیٹر سراج الحق کی اپیل پر کشمیر میں جاری بھارتی جارحیت کے خلاف اور برہان مظفروانی سمیت 40افراد کی شہادتوں اور خواتین سمیت عوام تشدد کے خلاف یوم احتجاج منایا گیا اورکراچی کے پانچوں اضلاع میں 38اہم مقامات پر مظاہرے کیے گئے جس میں عوام کی بڑی تعداد نے شرکت کی اور بھارتی حکمرانوں اور غاصب افواج کے ظلم و ستم کی شدید مذمت کی گئی، اس سلسلے میں ایک بڑا مظاہرہ میمن مسجد بولٹن مارکیٹ پر کیا گیا جس سے امیر جماعت اسلامی کراچی حافظ نعیم الرحمن اور دیگر رہنماؤں نے خطاب کیا ۔
3

اہل سنت والجماعت پاکستان کے سربراہ مولانا محمد احمد لدھیانوی کی اپیل پر مدینہ منورہ میں دہشت گردی اور کشمیر میں جاری بھارتی درندگی کیخلاف مرکز اہل سنت جامع مسجد صدیق اکبر ناگن چورنگی پراحتجاجی مظاہرہ کیا گیا ،مظاہرین سے خطاب کرتے ہوئے مرکزی صدر اہل سنت والجماعت پاکستان علامہ اورنگزیب فاروقی ، علامہ رب نوازحنفی اور دیگر نے خطاب کرتے ہوئے کہا مدینہ منورہ میں دہشت گردی ناقابل قبول ہے۔

4

انہوں نے کہا کہ ہمارے کشمیری بھائی سینے پر گولی کھا کربھی کشمیر بنے گا پاکستان کے نعرے لگا تے ہیں چنانچہ ہم بھی اپنے کشمیری بھائیوں کے ساتھ کھڑے ہیں لیکن افسوس کہ ٹھنڈے کمروں میں بیٹھے ان نام نہاد حکمرانوں پر جنہوں نے مودی سے اپنی دوستی اور تجارتی تعلقات قائم رکھنے کیلئے کشمیری بھائیوں کیلئے ہمدردی کے دو بول بولنا بھی گوارا نہ کئے۔

جمعیت علمائے اسلام (ف) کے سربراہ مولانا فضل الرحمان کی اپیل پر جے یو آئی کے زیر اہتمام مدینہ میں دہشت گردی اور مقبوضہ کشمیر میں بھارتی مظالم کے خلاف یوم احتجاج کے موقع پر کراچی پریس کلب کے باہر احتجاجی مظاہرہ کیاگیا۔ احتجاجی مظاہرے سے جمعیت علمائے اسلام (ف) کے صوبائی رہنماء قاری محمد عثمان، مولانا عبدالکریم عابد مولانا ناصر خالد محمود سومرو اور دیگر نے خطاب کیا۔ قاری محمد عثمان نے کہا کہ مدینہ منور ہ میں ہونے والی دہشت گردی نے اہل اسلام کے دلوں کو زخمی کردیا ہے۔ جبکہ مقبوضہ کشمیر میں آئے روز مظالم میں اضافہ ہو رہا ہے۔بھارت بزور طاقت تحریک آزادی کو کچل کر کے کشمیر پر اپنا غاصبانہ قبضہ برقرار رکھنا چاہتا ہے۔

جماعۃ الدعوۃ کی اپیل پر کراچی میں بھی کشمیریوں سے اظہار یکجہتی اور بھارتی مظالم کے خلاف یوم احتجاج منایا گیا۔ شہر میں 15 سے زائد مقامات پر احتجاجی مظاہرے کیے گئے، بڑے مظاہرے نمائش چورنگی، حسن اسکوائر، ناگن چورنگی، میمن مسجد بولٹن مارکیٹ، پنجاب چورنگی اور شارع فیصل پر ہوئے۔ نمائش چورنگی پر مظاہرین سے جماعۃ الدعوۃ کراچی کے مسؤل ڈاکٹر مزمل اقبال ہاشمی نے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ بھارت کشمیر میں ظلم و جبر کے باوجود کشمیریوں کے حوصلے پست نہیں کرسکا۔ اگر اقوام متحدہ مسلم مقبوضہ خطوں پر دہرا معیار برقرار رکھتی ہے تو مسلم ممالک اپنی الگ یونین بنائے۔ کشمیر کی آزادی کشمیریوں کا حق ہے، اس پر کوئی سمجھوتہ نہیں کیا جاسکتا۔

پیپلز پارٹی کے تحت کشمیری عوام سے اظہار یکجہتی کے لیے کراچی پریس کلب کے باہراحتجاجی مظاہرہ کیا گیا۔ مظاہرین نے بھارتی وزیر اعظم نریندر مودی کا پتلا بھی نذر آتش کیا۔ مظاہرے میں مشیر اطلاعات سندھ مولا بخش چانڈیو ،پیپلز پارٹی کے مرکزی رہنما سینیٹر سعید غنی، پیپلز پارٹی سندھ کے جنرل سیکرٹری سینیٹر تاج حیدر، وقار مہدی، راشد ربانی ،شاہدہ رحمانی،سردار نزاکت و دیگر نے بھی خطاب کیا۔

جمعیت علماء پاکستان (نورانی)کراچی کے تحت یوم احتجاج کے موقع پر اجتماعات اور مظاہروں سے خطاب کرتے ہوئے کراچی ڈویژن کے کنوینر علامہ عقیل انجم قادری ،علامہ قاضی احمدنورانی صدیقی ودیگر نے کہاکہ حکومت پاکستان کشمیر کا مسئلہ کشمیریوں کی خواہشات کے مطابق حل کرنے کے لیے کردار ادا کرے،

لاہور میں بھی سیاسی اور مذہبی جماعتوں نے کشمیریوں سے اظہار یکجہتی کے لئے ریلیاں نکالیں ۔۔ مظاہرین نے بھارت کے ساتھ تجارتی روابط ختم کرنے کا بھی مطالبہ کیا۔ لاہور پریس کلب کے باہر پیپلز پارٹی کے کارکنوں نے بھارت کے خلاف نعرے بازی کرتے ہوئے تجارتی تعلقات ختم کرنے کا مطالبہ کیا۔ جمعیت علما اسلام کے کارکنوں نے کشمیر یوں سے اظہار یکجہتی کے ساتھ مدینہ منور ہ میں دھماکے کے خلاف احتجاج کرتے ہوئے اقوام متحدہ اور او آئی سی کا اجلاس طلب کرنے کا مطالبہ کردیا۔ مظاہرین نے امریکی پرچم نذر آتش کیا اور نعرے بازی کی۔

فیصل آباد، کشمیریوں پر بھارتی فوج کے مظالم پر فیصل آباد کے شہری آگ بگولہ ہوگئے بھارتی وزیراعظم نریندر مودی کا پُتلا جلایا گیا، لوگوں نے مودی کے پتلے پر ڈنڈے برسا کر دل کی بھڑاس نکالی۔

اسلام آباد کے شہری بھارتی مظالم کے خلاف بینرز اٹھائے سڑکوں آگئے۔ بینرز پر بھارت کشمیریوں پر مظالم بند کرے۔ کشمیر بنے گا پاکستان کے نعرے درج تھے۔

پشاور میں شہداء کشمیر کے لئے غائبانہ نماز جنازہ ادا کی گئی، ملتان کی وکلاء برادری نے بھی کشمیریوں کے ساتھ اظہار یکجہتی کیا۔ اور نریندر مودی کیخلاف نعرے لگائے۔

مکران میں سبز ہلالی پرچم اٹھائے شہریوں نے احتجاجی ریلی نکالی تو چمن بھی کشمیر زندہ باد کے نعروں سے گونج اٹھا۔

نوابشاہ میں سیاسی وسماجی تنظیموں کی جانب سے مظاہرہ کیا گیا۔ مظاہرین نے شہداء کشمیر کی غائبانہ نماز جنازہ ادا کی۔

سانگھڑ میں بڑوں کے ساتھ بچوں نے بھی بھارتی مظالم کے خلاف آواز اٹھائی۔ سکھر میں نہتے اور مظلوم کشمیریوں سے اظہار یکجہتی کے لئے مظاہرہ کیا گیا۔

 

Print Friendly, PDF & Email

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں