The news is by your side.

Advertisement

کشمیر،فلسطین کے تنازعات اقوام متحدہ کی ناکامیاں ہیں،وزیر خارجہ

اسلام آباد: وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی کا کہنا ہے کہ کشمیر،فلسطین کے تنازعات اقوام متحدہ کی ناکامیاں ہیں۔

تفصیلات کے مطابق اقوام متحدہ کے 75ویں اجلاس سے وزیرخارجہ نے ویڈیولنک کے ذریعے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ اقوام متحدہ کی ڈائمنڈ جوبلی منانا ایک تاریخی موقع ہے۔

شاہ محمود قریشی کا کہنا تھا کہ اقوام متحدہ کے ادارے کے وجود نے تاریخی ضروری تقاضا پورا کیا تھا،ضروری تقاضا تھا آئندہ نسلوں کو جنگ کےعفریت سے بچایا جائے۔

وزیر خارجہ نے کہا کہ آج خوش کن اتحادکی خوشنیاں منانے کا موقع ہے،یہ باوقار انداز میں خوداحتسابی کا موقع بھی ہے۔انہوں نے کہا کہ اقوام متحدہ کے بنیادی اصولوں کی طرف پلٹ کر دیکھنے کا موقع ہے،ادارےکی کامیابیوں کے ساتھ ناکامیوں کو بھی ملا کر دیکھنا ہوگا۔

انہوں نے کہا کہ کشمیروفلسطین کے تنازعات دیرینہ واضح ناکامیوں کے مظاہر میں سے ہیں،جموں وکشمیر کے عوام سے استصواب رائے کے حق کا وعدہ کیا گیا تھا، مقبوضہ کشمیر کے عوام استصواب رائے کے حصول کے آج بھی منتظر ہیں۔

شاہ محمود قریشی کا کہنا تھا کہ اقوام متحدہ کی قراردادوں،فیصلوں کی دھجیاں اڑائی جا رہی ہیں،سلامتی کونسل کے معاملے پر باہمی تعاون کم ترین سطح پر رہا، عالمی ماحول کے تحفظ،ترقی کے کلیدی معاہدے اٹھا کر پھینکے جا رہے ہیں۔

وزیر خارجہ نے کہا کہ نسل پرستانہ،فسطائی قوتیں دوسری جنگ عظیم کا مؤجب بنیں،نسل پرستانہ قوتیں غیرملکیوں،اسلام سے نفرت کی شکل میں پھر سر اٹھا رہی ہیں۔

کرونا کے حوالے سے شاہ محمود قریشی کا کہنا تھا کہ اگرچہ کرونا کے مقابلے کے لیے بے پناہ عالمی تعاون دیکھ چکے ہیں،اقوام متحدہ بنی نوع انسان کو ایسے متحد کرنے میں ناکام رہی جیسا کیا جاسکتا تھا۔

وزیر خارنہ شاہ محمود قریشی نے مزید کہا کہ ادارہ طاقت کے بہیمانہ استعمال کے سامنے بے بس دکھائی دیتا ہے۔

Comments

یہ بھی پڑھیں