site
stats
پاکستان

مقبوضہ کشمیر میں کشیدگی کا 129 واں روز، 14 نوجوان گرفتار

سرینگر: مقبوضہ کشمیر میں کشیدگی 129 ویں روز بھی برقرار ہے۔ بھارتی فورسز نے گھر گھر تلاشی کے دوران 14 نوجوانوں کو گرفتار کرلیا۔ گرفتاری پر سراپا احتجاج مظاہرین پر آنسو گیس کی شیلنگ بھی کی گئی۔

کشمیری عوام کی مشکلات کم نہ ہوسکیں۔ بھارت کی ریاستی دہشت گردی نے مقبوضہ وادی کے باسیوں کی زندگی اجیرن کردی۔

بھارتی فورسز گھر گھر تلاشی کے بہانے چادر اور چار دیواری کا تقدس پامال کر رہی ہے لیکن انسانی حقوق کے عالمی علمبردارخاموش ہیں۔ بھارتی فورسز نے تلاشی کے دوران 14 نوجوانوں کو بھی گرفتار کرلیا۔

بھارت کے مظالم کے خلاف مقبوضہ کشمیر کے گلی کوچوں میں احتجاج بھی مستقل جاری ہے۔ مظاہرین کو منتشر کرنے کے لیے بھارتی فورسز آنسو گیس کا بے دریغ استعمال کر رہی ہیں۔

دوسری جانب کٹھ پتلی انتظامیہ کی قید میں دختر ملت کی رہنما آسیہ اندرابی کی طبیعت ناساز ہوگئی۔ کشمیری رہنماؤں نے آسیہ اندرابی کا علاج کروانے کا مطالبہ کیا ہے۔ حریت رہنماؤں نے بھارتی فورسز کی وحشیانہ کارروائیوں کے خلاف 17 نومبر تک احتجاج جاری رکھنے کا اعلان کیا ہے۔

واضح رہے کہ امریکا میں ڈونلڈ ٹرمپ کے صدر منتخب ہونے کے بعد پاکستان مسئلہ کشمیر کے حل کے لیے امریکا کی ثالثی کا منتظر ہے۔ مشیر امور خارجہ سرتاج عزیز کا کہنا ہے کہ انتخابی مہم کے بیانات پالیسیوں سے مختلف ہوتے ہیں۔ دہشت گردی کا خاتمہ امریکا اور پاکستان کی پہلی ترجیح ہیں۔ مسئلہ کشمیر پر امریکا کی ثالثی کا خیر مقدم کریں گے۔

انہوں نے کہا کہ ڈونلڈ ٹرمپ کے سامنے کشمیر کا مسئلہ رکھا جائے گا۔

Print Friendly, PDF & Email
20

Comments

comments

اس ویب سائیٹ پر موجود تمام تحریری مواد کے جملہ حقوق@2018 اے آروائی نیوز کے نام محفوظ ہیں

To Top