site
stats
اہم ترین

قصور، زیادتی کے بعد قتل ہونے والی ننھی پری زینب سپرد خاک

قصور: زیادتی کے بعد قتل ہونے والی سات سالہ کم سن بچی زینب کو آہوں اور سسکیوں کے دوران سپرد خاک کردیا گیا ننھی پری کی نمازجنازہ علامہ طاہرالقادری نے پڑھائی۔

تفصیلات کے مطابق زیادتی کے بعد قتل ہونے والی بچی زینب کو ہزاروں سوگواروں کی موجودگی میں آخری آرام گاہ منتقل کردیا گیا اس موقع پر رقت آمیز مناظر دیکھے گئے جہاں ہر آنکھ اشک بار اور ہر دل اداس تھا۔

ننھی پری زینب کی نماز جنازہ پڑھانے کے لیے ڈاکٹر طاہر القادری خصوصی طور پر قصور پہنچے تھے اور ہزاروں افراد کی موجودگی میں نماز جنازہ کی امامت کی۔

قبل ازیں صوبہ پنجاب کے شہر قصور میں 7 سالہ بچی زینب کے قتل اور زیادتی کے خلاف لوگ احتجاجاً سڑکوں پر نکل آئے اور مشتعل افراد نے ڈی سی او اور ڈی پی او آفس کا گھیراؤ کرلیا اس دوران پولیس کی فائرنگ سے 3 مظاہرین جاں بحق ہوگئے ہیں۔

یاد رہے کہ زینب کے والدین عمرےکی سعادت کے لئے سعودیہ عرب میں تھے کہ خالہ کے گھر مقیم کمسن زینب کو پانچ روز پہلے اغوا کیا گیا تھا، جس کے بعد سفاک درندوں نے بچی کو زیادتی نشانہ بنا کر قتل کردیا ، واقعہ کیخلاف شہر میں پورے دن شٹر ڈاون ہڑتال اور احتجاج کا سلسلہ جاری ہے اور دکانیں، مارکیٹس ودیگرتجارتی مراکزبند ہیں۔

پولیس سفاک قتل کی واردات میں روایتی ہٹ دھرمی کا مظاہرہ کررہی ہے اور اس کے باوجود کہ بچی کے اغوا کی سی سی ٹی وی فوٹیج سامنے آگئی ہیں لیکن تاحال پولیس اب تک ملزم کو گرفتار نہیں کرسکی۔


مزید پڑھیں: وزیر اعلیٰ پنجاب کا قصور میں 7 سالہ بچی کے قتل کا نوٹس


دوسری جانب وزیراعلیٰ پنجاب شہبازشریف نے قصور میں آٹھ سال کی بچی کے قتل کا نوٹس لیتے ہوئے آئی جی پنجاب سے رپورٹ طلب کرلی ہے اور ملزمان کی فوری گرفتاری کاحکم دیتے ہوئے ، آئی جی کوجائےوقوعہ پرپہنچنے کی ہدایت کی۔

خیال رہے کہ گذشتہ ڈیڑھ سال کے دوران قصورمیں بچیوں کواغواکےبعدقتل کرنےکا یہ دسواں واقعہ ہے اور پولیس ایک بھی ملزم کو گرفتار کرنے میں ناکام ثابت ہوئی ہے۔


اگر آپ کو یہ خبر پسند نہیں آئی تو برائے مہربانی نیچے کمنٹس میں اپنی رائے کا اظہار کریں اور اگر آپ کو یہ مضمون پسند آیا ہے تو اسے اپنی فیس بک وال پر شیئر کریں۔

Print Friendly, PDF & Email
20

Comments

comments

اس ویب سائیٹ پر موجود تمام تحریری مواد کے جملہ حقوق@2018 اے آروائی نیوز کے نام محفوظ ہیں

To Top