site
stats
پاکستان

اسحاق ڈار کیخلاف اہم گواہ قابوس عزیزعدالت میں پیشی کیلئے تیار

اسلام آباد :وزیر خزانہ اسحاق ڈار کیخلاف اہم گواہ قابوس عزیزعدالت میں پیشی کیلئے تیار ہوگیا ، قابوس عزیز کو رواں ماہ احتساب عدالت میں پیش کیا جائے گا۔

تفصٰلات کے مطابق وزیر خزانہ اسحاق ڈار کیخلاف اثاثہ جات ریفرنس کیس میں اہم گواہ قابوس عزیزعدالت میں پیشی کیلئے تیار ہوگیا، نیب نے قابوس عزیزکو خط لکھا ہے، جس میں قابوس کو اسحاق ڈار کیخلاف گواہی کیلئے تیار رہنے کی ہدایت کی گئی ہے، قابوس عزیز نے پیشی کیلئے نیب کو تحریری طور پر آگاہ کردیا ہے۔

قابوس عزیز کو رواں ماہ احتساب عدالت میں بطور گواہ پیش کیا جائے گا۔

یاد رہے کہ نادرا کے افسرسید قابوس عزیز کو اسحاق ڈار اور ان کے بچوں کی تفصیلات نیب لاہور کو فراہم کرنے پر نوکری سے برخاست کردیا گیا تھا۔


مزید پڑھیں : نیب کو اسحاق ڈار کی جائیداد کا ریکارڈ فراہم کرنے والا نادرا افسرملازمت سے فارغ


قابوس عزیز نادرا کےڈائریکٹر ڈیٹا بیس نیب ریفرنسز میں نادرا کے فوکل پرسن تھے۔

یاد رہے کہ گذشتہ روز وزیرخزانہ اسحاق ڈارکے خلاف اثاثہ جات ریفرنس کی سماعت میں گواہ اشتیاق علی کا بیان ریکارڈ کیا گیا تھا، گواہ اشتیاق علی نے اپنے بیان اورفراہم کردہ ریکارڈکی تائید کی تھی۔

اشتیاق علی نے کہا تھا کہ ایس ڈی ایچ سیکیورٹی کمپنی کے سی ای او کےنام پر کمپنی اکاؤنٹ کھلوایا گیا، بینک میں کمپنی کے علاوہ اسحاق ڈارکا ذاتی اکاؤنٹ بھی ہے ،سولہ اپریل 2003 کو ڈائریکٹر نعیم محمود نے ایڈریس تبدیل کرنے کا خط لکھا۔

واضح رہے کہ 27 ستمبر وزیرخزانہ اسحاق ڈار پر فرد جرم عائد کی گئی تھی تاہم اسحاق ڈار نے صحت جرم سے انکار کیا تھا اور کہا تھا کہ عدالت میں اپنی بے گناہی ثابت کروں گا اورالزامات کا دفاع کروں گا۔

بعد ازاں اسحاق ڈار نے احتساب عدالت کی جانب سے فرد جرم عائد کرنے کے فیصلے کو اسلام آباد ہائیکورٹ میں چیلنج کرتے ہوئے اپنے خلاف ٹرائل روکنے کی بھی استدعا کی تھی۔


مزید پڑھیں : اسحاق ڈار کی فرد جرم کے خلاف درخواست عدالت میں مسترد


جس کے بعد اسلام آباد کی ہائیکورٹ نے وفاقی وزیر خزانہ اسحاق ڈار پر فرد جرم کے خلاف ان کی دائر کردہ درخواست مسترد کردی تھی، عدالت نے ریمارکس میں کہا تھا احتساب عدالت کی کارروائی روکنے کا اختیارہائیکورٹ کونہیں۔


اگرآپ کو یہ خبر پسند نہیں آئی تو برائے مہربانی نیچے کمنٹس میں اپنی رائے کا اظہار کریں اوراگرآپ کو یہ مضمون پسند آیا ہے تو اسے اپنی فیس بک وال پرشیئرکریں۔

Print Friendly, PDF & Email
20

Comments

comments

اس ویب سائیٹ پر موجود تمام تحریری مواد کے جملہ حقوق@2018 اے آروائی نیوز کے نام محفوظ ہیں

To Top