خیر پور واقعے کا مقدمہ چار روز گزرنے کے بعد درج کرلیا گیا -
The news is by your side.

Advertisement

خیر پور واقعے کا مقدمہ چار روز گزرنے کے بعد درج کرلیا گیا

خیرپور: بلدیاتی الیکشن کے روز فنکشنل لیگ رہنما اسماعیل شاہ پر حملے میں 11 افراد کی ہلاکتوں کا 4 دن گذرنے کے بعد بالآخر مقدمہ درج کرلیا گیا، تاہم کوئی بھی گرفتاری عمل میں نہیں آسکی۔

خیرپور کے قریب یوسی درازا میں مسلم لیگ فنکشنل کے رہنما اور وفاقی وزیر صدرالدین شاہ راشدی کے بیٹے اسماعیل شاہ کے قافلے پر حملہ کے نتیجے میں 11 افراد شہید ہوئے تھے جس کا مقدمہ 4 دن گذرنے کے بعد بلآخر رانی پور تھانہ پر درج کیا گیا ہے۔

فنکشنل لیگ کے رہنما غلام مرتضی شاہ کی مدعیت میں 27 ملزمان کو ایف آئی آر میں نامزد کیا گیا ہے جس میں دہشت گردی ایکٹ کے دفعات شامل کئے گئے ہیں،تاہم کوئی بھی ملزم گرفتار نہیں کیاگیا ہے۔

دوسری جانب فنکشنل لیگ رہنما اسماعیل شاہ راشدی کا کہنا ہے کہ ہم اس ایف آئی آر سے مطمئن نہیں ہیں پر اس کے باوجود قانون کا احترام کرتے ہیں اور دیکھتے ہیں کہ انتظامیہ کب تک ملزمان کو گرفتار کرتی ہے دیگر صورت آئندہ کا لائحہ عمل جلد سامنے لائیں گے۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں