The news is by your side.

Advertisement

دنیا میں کہیں بھی وزراء کے مقابلے نہیں کرائے جاتے، خالد مقبول صدیقی

کراچی : وفاقی وزراء میں کارکردگی کی بنیاد پر سرٹیفکیٹ بانٹنے کا معاملہ متنازع ہوگیا، ایم کیو ایم پاکستان کے کنوینئر ڈاکٹر خالد مقبول صدیقی نے طریقہ کار پر اعتراض اٹھا دیا۔

ان خیالات کا اظہار  خالد مقبول صدیقی نے میڈیا نمائندوں ست گفتگو کرتے ہوئے کیا  اپنے ایک بیان میں انہوں نے کہا کہ ماضی میں نہ پاکستان اور نہ ہی بیرون ملک ایسی کوئی مثال دیکھی۔

انہوں نے کہا کہ دنیا میں ایسی کوئی مثال نہیں جہاں وزراء کی کارکردگی جانچنے کیلئے مقابلے کرائے جائیں، ایسے اقدامات سے حکومت کی غیرسنجیدگی کا تاثر سامنے آتا ہے۔

خالد مقبول صدیقی کا کہنا تھا کہ حکومت کی اس غیرسنجیدگی کا ہم پہلے بھی گلہ کرتے رہے ہیں وزراء کا اہم مقام ہوتا ہے، ان کی عزت واحترام کو ملحوظ خاطر رکھنا چاہیے۔

متحدہ قومی موومنٹ کے کنوینئر نے مزید کہا کہ ایسا لگتا ہے کہ جیسے حکومت کوئی کھلونا ہے جو کھیلنے کے لیے دی گئی ہے۔

علاوہ ازیں ملک میں بڑھتی ہوئی مہنگائی کے پیش نظر ایم کیو ایم پاکستان کی رابطہ کمیٹی کا اجلاس شروع ہوگیا، اجلاس کی صدارت ڈاکٹر خالد مقبول صدیقی کر رہے ہیں، اجلاس میں رابطہ کمیٹی بڑھتی ہوئی مہنگائی پر اپنےلائحہ عمل کا فیصلہ کرے گی۔

Comments

یہ بھی پڑھیں