The news is by your side.

Advertisement

مڈٹرم الیکشن جمہوری مطالبہ ہے البتہ پارٹی نے حتمی فیصلہ نہیں کیا، خواجہ آصف

اسلام آباد: مسلم لیگ ن کے رہنما اور رکن قومی اسمبلی خواجہ آصف نے کہا ہے کہ مڈٹرم الیکشن جمہوری مطالبہ ہے البتہ پارٹی نے ابھی حتمی فیصلہ نہیں کیا ہے۔

تفصیلات کے مطابق مسلم لیگ ن کے رہنما خواجہ آصف نے اے آر وائی نیوز کے پروگرام ’آف دی ریکارڈ’ میں گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ عید کے بعد مشاورتی اجلاس میں پارٹی پالیسی پر بات کی جائے گی، پارٹی تنظیم بن گئی ہے مشاورت کے لیے اجلاس کی تجویز آئی ہے۔

خواجہ آصف نے کہا کہ آئی ایم ایف سے معاہدہ ہوا، معاشی ٹیم میں نئے چہرے لائے گئے، حکومتی ٹیم میں شامل کچھ چہرے پرانے ہیں، حکومت کی طرف سے ایمنسٹی اسکیم لائی گئی یہ چیزیں بہت اہم ہیں، حکومت مارکیٹ کو اپنے اعتماد میں نہیں لے سکی۔

مزید پڑھیں: خواجہ آصف کی حکومت کو بڑی دھمکی

انہوں نے حکومت پر تنقید کرتے ہوئے کہا کہ پی ٹی آئی حکومت کا رویہ اپوزیشن والا ہے، زبان بھی وہی ہے، سیاست چھوڑ دوں گا مگر ان جیسی کنٹینر والی زبان استعمال نہیں کروں گا۔

ایک سوال کے جواب میں خواجہ آصف نے کہا کہ لوگ کیش پیسہ رکھ رہے ہیں، بینکوں میں بھی پیسہ نہیں رکھ رہے، حالات یہ ہیں کہ اگلے سال تک ڈالر کی قیمتیں اور بڑھنے کی بات ہورہی ہے، معاشی صورت حال کی سمت کس طرف ہے سمجھ سے باہر ہے۔

خواجہ آصف نے کہا کہ بلاول کو جواب دینے میں بھی وزرا کی لڑائی ہوگئی، حکومتی صفوں میں غیرسنجیدگی ہے وزرا بچگانہ حرکتیں کررہے ہیں۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں