ہمارے گوشواروں کی بات کرنے والے اپنے گوش وارے آن لائن کرائیں ،خواجہ اظہارالحسن
The news is by your side.

Advertisement

ہمارے گوشواروں کی بات کرنے والے اپنے گوشوارے آن لائن کرائیں ،خواجہ اظہارالحسن

کراچی : ایم کیو ایم پاکستان کے رہنما خواجہ اظہارالحسن کا کہنا ہے کہ ہمارےگوشواروں کی بات کرنے والےاپنے گوشوارے آن لائن کرائیں، میں نے حساب دینا شروع کیا تو بہت مشکل ہو جائے گی، یم کیو ایم نہ میں نے نہ فاروق ستار نے بلکہ کارکنان نےبچائی ہے۔

تفصیلات کے مطابق کراچی میں انسداد دہشت گردی کی عدالت کے باہر ایم کیو ایم پاکستان کے رہنما خواجہ اظہارالحسن نے میڈیا سے بات چیت کرتے ہوئے کہا جھوٹے الزامات کا دفاع کرنے آئے ہیں ، ردجرم عائدکردی گئی،گواہوں نےثابت کرناہےمجرم ہیں یانہیں۔

خواجہ اظہارالحسن کا کہنا تھا کہ ملک کے فرسودہ نظام کو تبدیل کرنے کی ضرورت ہے ،خسندھ اسمبلی میں14ہزارقیدافرادکی نشاندہی کی جن پرفردجرم عائدنہیں،فردجرم عائدنہ ہونےوالےقیدیوں میں سیکڑوں ایم اکیوایم کارکنان ہیں ، چیف جسٹس سےاپیل ہے سندھ اسمبلی کی کاروائی منگوا کر ازخودنوٹس لیں۔

میں نے حساب دینا شروع کیا تو بہت مشکل ہو جائے گی

خواجہ اظہار الحسن

رہنما ایم کیو ایم پاکستان نے کہا ایم کیو ایم نے 7 نشستیں حاصل کیں جو 24 کے برابر ہیں ، ہمارےگوشواروں کی بات کرنے والےاپنے گوش وارے آن لائن کرائیں، فاروق ستار 2017 میں جمع کرایا گیا انکم ٹیکس آن لائن کردیں۔

ان کا مزید کہنا تھا کہ میرااور ایم کیو ایم کااحتساب کرنا ہے توعدالت میں چیلنج کریں ،نوٹس بھجوائیں، میڈیا پر آکر سستی شہرت کے لیے اعلانات نہ کیے جائیں، میں نے حساب دینا شروع کیا تو بہت مشکل ہو جائے گی ،22 اگست کی رات کاہی حساب دیا تو بہت مشکل ہو جائے گی۔

خواجہ اظہارالحسن نے کہا کون ہیں فاروق بھائی؟ ہم تو دریاں بچھانے والے کارکن ہیں ، ایم کیو ایم نہ میں نے نہ فاروق ستار نے بلکہ کارکنان نےبچائی ہے۔

مزید پڑھیں : ایم کیوایم میں چند لوگوں کی آمریت ہے، وہ اپنے گوشوارے ظاہر کریں ،فاروق ستار

یاد رہے 5 نومبر کو ایم کیو ایم فاروق ستار نے پریس کانفرنس کرتے ہوئے کہا تھا کہ رابطہ کمیٹی کے لوگ کہتے ہیں پارٹی میں آمریت نہیں، ایم کیوایم میں چند لوگوں کی آمریت ہے،وہ اپنے گوشوارے ظاہر کریں، وہ چند لوگ دبئی سمیت جہاں جائیدادیں ہیں، گوشوارے کارکنان کوبتائیں۔

فاروق ستار کا کہنا تھا کہ جمہوریت کے نام پر اقتدار کے مزے لوٹنے والوں کو حساب دینا ہوگا، میں کل بھی پی آئی بی کالونی میں رہتا تھا اور آج بھی وہیں رہتا ہوں، وہ چند لوگ بتا دیں 1986میں کہاں رہتے تھے اور اب کہاں رہتے ہیں۔

رہنما ایم کیو ایم پاکستان کا کہنا تھا کہ انسداد کرپشن کےنعرے پروزیراعظم عمران خان کے ساتھ کھڑا ہوں، پیپلز پارٹی،ن لیگ،ایم کیو ایم سمیت جس نے بھی لوٹ مار کی احتساب ہونا چاہیے، پوچھا جائے یہ جائیدادیں اور پراپرٹیز کہاں سے آئیں؟

خیال رہے گذشتہ روز ایم کیو ایم پاکستان کی رابطہ کمیٹی نے فاروق ستار کو پارٹی سے نکال دیا تھا، سابق سربراہ کی بنیادی رکنیت ختم کرنے کا فیصلہ بہادر آباد مرکز میں ہنگامی اجلاس بلا کر کیا گیا تھا۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں