The news is by your side.

Advertisement

عمران خان ملکی مفادات کے لیے خطرہ ہیں، خواجہ سعد رفیق

اسلام آباد : وفاقی وزیر ریلوے خواجہ سعد رفیق نے کہا ہے کہ سی پیک میں جہاں بھی رکاوٹ آئی اس کے ذمہ دار چیئرمین پی ٹی آئی عمران خان ہیں۔ افسوس ہے کہ پی ٹی آئی نے ہٹ دھرمی برقرار رکھتے ہوئے پارلیمنٹ کے مشترکہ اجلاس کا بائیکاٹ کیا عمران خان سیاست چھوڑ کر فاسٹ بولنگ کی کوچنگ شروع کردیں۔

ان خیالات کا اظہار انہوں نے اسلام آباد میں پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے کیا، خواجہ سعد رفیق نے عمران خان کو مخاطب کرکے اور ان کو ملکی مفادات کیلیے خطرہ قرار دیتے ہوئے کہا کہ عمران خان کے فیصلے پر بھارتی میڈیا نے بھی ان کا مذاق اڑایا۔

انہوں نے کہا کہ پی ٹی آئی مشترکہ اجلاس میں شرکت کرے گی تو ہمیں خوشی ہوگی لیکن افسوس ہے کہ انہوں نے پارلیمنٹ کے مشترکہ اجلاس کے بائیکاٹ کا فیصلہ برقراررکھا، اجلاس کا بائیکاٹ پی ٹی آئی کی ہٹ دھرمی ہے۔ پی ٹی آئی کے دھرنے کی وجہ سے سال 2014 میں چین کے صدر کا دورہ بھی ملتوی ہوا، دھرنا شو ناکام ہوا، جوڈیشل کمیشن کے بعد بھی انہوں نے معافی نہیں مانگی، سیاست مدبرانہ لوگوں کا کام ہے۔

خواجہ سعد رفیق کا کہنا تھا کہ سی پیک کو متنازع بنانے کے لیےعمران خان نے ایڑی چوٹی کا زور لگایا۔ پی ٹی آئی کے احتجاج کے خلاف حکومت کی پالیسی ٹھیک ثابت ہوئی۔

مقبوضہ کشمیر میں بھارتی جارحیت کے حوالے سے وفاقی وزیر نے کہا کہ بھارت فوجی طاقت اور دھونس سے کب تک کشمیریوں پر ظلم کرتا رہے گا، حکومت پاکستان مقبوضہ کشمیر کی آزادی کی تحریک کی حمایت جاری رکھے گی۔

ہم مسلسل کشمیریوں کی آواز میں آواز ملاتے رہیں گےاور ان کی سفارتی ،سیاسی اور اخلاقی حمایت جاری رکھیں گے، کشمیریوں کو غلام بنا کر نہیں رکھا جاسکتا، پوری پاکستانی قوم کشمیر کاز پر ایک ہے۔

خواجہ سعد رفیق نے کہا ہے کہ ایل او سی پر بھارتی فوج خلاف ورزیوں کی مذمت کرتے ہیں، ایل او سی پی بھارت کی خلاف ورزیاں کھلی جارحیت ہے، اقوام متحدہ بھارتی خلاف ورزیوں کا نوٹس لے۔


خواجہ سعد رفیق نے شیخ رشید سے متعلق چیف جسٹس انور ظہیر جمالی کے ریمارکس پر تبصرہ کرتے ہوئے کہا کہ جسے 40 سالہ سیاست ترک کرنے کا مشورہ دیا جائے اسے سمجھ لینا چاہیے کہ وہ سیاست سے فارغ ہے، خواجہ سعد رفیق نے کہا کہ پنڈی سے احتجاج کی کال دینے والے کی آواز پر گنتی کے لوگ نکلے۔

Print Friendly, PDF & Email

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں