The news is by your side.

Advertisement

مخالفین ووٹ کےبجائےسازش سےاقتدارمیں آنا چاہتے ہیں‘ سعد رفیق

لاہور: وفاقی وزیرریلوے خواجہ سعد رفیق کا کہنا ہے کہ نئی حلقہ بندیوں کے لیے ترمیم نہ کی توانتخابات کا بروقت انعقاد نہیں ہوپائے گا۔

تفصیلات کے مطابق وفاقی وزیر ریلوے خواجہ سعد رفیق نے ٹویٹر پر اپنے پیغام میں کہا کہ نئی مردم شماری کے ابتدائی نتائج کا اعلان ہوچکا، انتخابات پرانی مردم شماری کی بنیاد پر کرانا آئین سے متصادم ہوگا۔

خواجہ سعد رفیق نے کہا کہ آئینی ترمیم سےگریزاں جماعتیں انتخابات سےخوفزدہ ہیں، مخالفین ووٹ کے بجائے سازش سے اقتدارمیں آنا چاہتے ہیں۔

وزیرریلوے کا کہنا ہے کہ ‏ہر 10 سال بعد نئی مردم شماری آئینی ذمہ داری ہے جبکہ قومی ڈیٹا بیس اپ ڈیٹ کیے بغیرمستقبل کی منصوبہ بندی ممکن نہیں ہے۔


مردم شماری کے بجائے آدم خوری کی گئی، فاروق ستار


انہوں نے کہا کہ ‏آخری مردم شماری 1998 میں مسلم لیگ ن لیگ ہی کے دورمیں کرائی گئی، پیپلز پارٹی نے اپنے دورمیں مردم شماری کی ذمہ داری ادا نہیں کی۔

خواجہ سعد رفیق کا کہنا ہے کہ 2013 میں سپریم کورٹ نے جلد مردم شماری کا آئینی حکم دیا، رکاوٹوں کے باوجود مسلم لیگ ن کی حکومت نے نئی مردم شماری کرائی۔

وفاقی وزیر ریلوے خواجہ سعد رفیق کا کہنا ہے کہ پنجاب کی سیٹیں کم ہوئیں، ہم نے گلہ نہیں کیا۔ انہوں نے کہا کہ پیپلزپارٹی اور پاکستان تحریک انصاف آئینی ترمیم کے لیے تعاون کریں تاکہ آئندہ انتخابات مقررہ وقت پر کرائے جا سکیں۔


اگر آپ کو یہ خبر پسند نہیں آئی تو برائے مہربانی نیچے کمنٹس میں اپنی رائے کا اظہار کریں اور اگر آپ کو یہ مضمون پسند آیا ہے تو اسے اپنی فیس بک وال پر شیئر کریں۔

Print Friendly, PDF & Email

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں