The news is by your side.

Advertisement

عمران خان، فیصل واوڈا جیسے لیڈر رکھیں گے تو کراچی والے ووٹ نہیں دیں گے، خواجہ سہیل منصور

کراچی: رکن قومی اسمبلی اور ایم کیو ایم پاکستان کے رہنما خواجہ سہیل منصور نے کہا ہے کہ فیصل واوڈا پر بات نہیں کرنا چاہتا، فیصل واوڈا کو ان کی پارٹی نے کوئی عہدہ بھی نہیں دیا ہے۔ عمران خان ایسے لیڈر رکھیں گے تو شاید کراچی والے ووٹ نہ دیں۔

ان خیالات کا اظہار انہوں نے کراچی میں پریس کانفرنس کرتے ہوئے کیا، خواجہ سہیل منصور نے کہا کہ فاروق ستار کی پراڈو کے 80 لاکھ روپے انشورنس کی مد میں ملے تھے، مجھ پر جو بھی کیس چل رہے ہیں وہ دیگر پارٹی رہنماؤں پر بھی ہیں۔

انہوں نے کہا کہ ایمنسٹی اسکیم صرف کالا دھن سفید کرنے والوں کے لیے لائی گئی ہے، اسکیم سے کلیئر ہونے والا پیسہ ملکی سیکیورٹی کے خلاف استعمال ہوسکتا ہے، 10 کروڑ ظاہر کرنے والے کو 3 کروڑ 42 لاکھ ٹیکس دینا پڑتا ہے، ایمنسٹی اسکیم کے تحت 50 لاکھ ٹیکس دو اور کلیئر ہوجاؤ۔

خواجہ سہیل منصور نے کہا کہ میں پاکستان میں سب سے زیادہ ٹیکس دینے والوں میں سے ہوں، مجھے ستارہ امتیاز دیا گیا جب ایمنسٹی اسکیم آئی میں نے ستارہ امتیاز واپس کرنے کا اعلان کیا، دنیا میں کہیں ایسی کوئی ایمنسٹی اسکیم نہیں ہے۔

رہنما ایم کیو ایم پاکستان نے کہا کہ اسکیم کے تحت پیسہ ظاہر نہیں کرنا بس 2 فیصد ٹیکس دے کر کلیئر کرنا ہے، میرا استعفیٰ تیار ہے، میں آج اسے اسپیکر اسمبلی کو بھیج رہا تھا، ٹیکس دینے والے کاروباری لوگوں نے مجھے کہا استعفیٰ نہ دیں، میں جس وقت مناسب سمجھوں گا استعفیٰ دے دوں گا۔

انہوں نے کہا کہ میں کاروباری لوگوں کے ساتھ مل کر ایک گروپ بناؤں گا، حکومت کو ایمنسٹی اسکیم واپس لینے کے لیے جدوجہد کروں گا، بزنس کمیونٹی کے ساتھ مل کر حکومت پر دباؤ بڑھانے کی کوشش کریں گے، ایمنسٹی اسکیم ملک کے لیے ایک کلنک کا ٹیکا ہے، ایماندار افراد کو پیچھے کرکے بے ایمانوں کو آگے لایا جارہا ہے، جن ممالک میں ایمنسٹی اسکیم آئی وہ سپریم کورٹ سے کلیئر ہوکر آئی۔


خبر کے بارے میں اپنی رائے کا اظہار کمنٹس میں کریں۔ مذکورہ معلومات کو زیادہ سے زیادہ لوگوں تک پہچانے کے لیے سوشل میڈیا پر شیئر کریں۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں