site
stats
سندھ

کراچی سے ملنے والا پینگولین چڑیا گھر سے کیرتھر نیشنل پارک منتقل

کراچی : کراچی سے ملنے والا بھارتی نسل کا پینگولین کراچی زو سے کیر تھر نیشنل پارک منتقل کردیا گیا ۔

تفصیلات کے مطابق سندھ وائلڈ لائف اور ڈبلیو ڈبلیو ایف کی انتظامیہ نے کراچی کے علاقے جمشید ٹاؤن اسلامیہ کالج  کے قریب رہائشی گلی سے پانچ روزقبل ملنے والا پینگولین کراچی چڑیا گھر سے کیر تھر نیشنل پارک منتقل کردیا ہے۔

مذکورہ پینگولین بھارتی نسل کا ہے، اور اس کا سائز تین فٹ ہے پاک و ہند میں پایا جانے والا انڈین پینگولن ایک بے ضرر اور نایاب جانور ہے جس کی نسل ختم ہونے کے قریب ہے۔

’’پینگولن‘‘ ایک نایاب نسل کا جانور ہے، یہ چیونٹی خور جانوروں کی نسل سے تعلق رکھنے والا ایک بے ضرر اور معصوم جانور ہے ۔

پینگولین محض کیڑے مکوڑے دیمک اور چیونٹیاں کھاتا ہے۔ اس کی لمبی تھوتنی اور باریک لمبی زبان ہوتی ہے، جسم پر سخت چھلکے ہوتے ہیں۔ خطرے کے وقت خود کو گیند کی طرح لپیٹ لیتا ہے۔

پینگولن کو ان جانوروں کی فہرست میں شامل کیا جاتا ہے جن کی نسل ختم ہونے کے خطرے سے دوچار ہے، پاکستان میں لوگ اپنی لاعلمی کی وجہ سے اس نایاب جانور کو خوفناک بلا سمجھ کر ہلاک کردیتے ہیں۔

Print Friendly, PDF & Email
20

Comments

comments

اس ویب سائیٹ پر موجود تمام تحریری مواد کے جملہ حقوق@2018 اے آروائی نیوز کے نام محفوظ ہیں

To Top