The news is by your side.

Advertisement

اے ٹی آرز طیاروں سے پی آئی اے کو یومیہ سات لاکھ روپے نقصان ہوگا، خورشید شاہ

اسلام آباد : قومی اسمبلی میں اپوزیشن لیڈر اور پیپلز پارٹی کے رہنما سید خورشید شاہ نے کہا ہے کہ اے ٹی آرز طیاروں کی وجہ سے پی آئی اے کو سات لاکھ روپے روزانہ کا نقصان ہوگا، وہ جہاز حاصل کئے گئے جو گلگت، کوئٹہ، اسکردو اور دیگر پہاڑی مقامات پر نہیں جا سکتے۔

ان خیالات کا اظہارانہوں نے اسلام آباد میں پبلک اکاؤنٹس کمیٹی کا اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے کیا، سید خورشید شاہ نے کہا کہ اے ٹی آرز طیارے ایسے ہیں کہ جس میں آگے بیٹھے دس افراد کو تمام مسافروں کے اترنے تک نشستوں سے اٹھنے کی اجازت نہیں ہوتی، آگے والے مسافر پہلے اٹھ جائیں تو طیارے کا توازن بگڑ جائے گا۔

پی آئی اے حکام نے کمیٹی کو بتایا کہ دو ہزار چار میں پی آئی اے منافع میں چل رہا تھا۔ ان کا کہنا تھا کہ قرضوں اور طیاروں کی لیز کی ادائیگی میں ماہانہ ساڑھے چار ارب روپے خرچ ہوتے ہیں۔ دو ہزار بیس تک ساٹھ طیارے ہوں گے۔

پی آئی اے حکام نے بتایا کہ پی آئی اے کے پائلٹس کی تعداد چار سو چونتیس ہے، سولہ پاکستانی پائلٹ سری لنکا میں تربیت حاصل کررہے ہیں۔

بعد ازاں پارلیمنٹ ہاؤس میں میڈیا سے بات کرتے ہوئے خورشید شاہ نے حکومت کی جانب سے ملاقات کیلئے رابطوں کی تصدیق کرتے ہوئے کہا کہ موجودہ صورتحال کا ذمہ دار خود حکومت ہے، فوج آئی تو ذمہ دار عمران خان اور نواز شریف ہوںگے، چیئرمین پی ٹی آئی فوج کو سیاست میں مت گھسیٹیں۔

خورشید شاہ نے عمران خان کو بچہ جمورا نہ بننے کا مشورہ بھی دیا۔ دیا۔ اپوزیشن لیڈر نے سانحہ کوئٹہ پر افسوس کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ سمجھ نہیں آ رہی صوبائی حکومتوں نے سیکورٹی پر توجہ کیوں نہیں دی۔ ٹریننگ سینٹر میں مقابلہ کرنے کیلئے اسلحہ بھی نہیں تھا جس کی تحقیقات ہونی چاہئے۔

 

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں