The news is by your side.

Advertisement

عدم اعتماد کب آئے گی؟ خورشید شاہ نے تاریخ بتا دی

لاہور: اپوزیشن کی جانب سے حکومت کے خلاف تحریک عدم اعتماد کے بلند وبانگ دعوی کئے جارہے ہیں تاہم ابھی تک تحریک پیش کرنے کی تاریخ کا اعلان نہ ہوا، تاہم آج پی پی پی رہنما کے بیان سے سیاسی ہلچل مچادی۔

تفصیلات کے مطابق ندیم افضل چن کی رہائشگاہ آمد کے موقع پر خورشید شاہ نے کہا کہ ہمارے نمبر پورے ہیں ، اسی لے تو میدان میں آئے ہیں، اب جس کے خلاف بھی تحریک عدم اعتماد پیش کریں گے وہ کامیاب ہوگی۔

اس موقع پر صحافیوں نے پی پی پی رہنما استفسار کیا کہ آیا تحریک عدم اعتماد پہلے وزیراعظم کے خلاف ہی لائیں گے؟ جس پر انہوں نے کہا کہ آٹھ یا نو تاریخ کو تحریک عدم اعتماد پیش کریں گے۔

خورشید شاہ نے واضح کیا کہ پہلے اسپیکر قومی اسمبلی کے خلاف عدم اعتماد کی تحریک لارہے ہیں، بعد ازاں وزیراعظم کی باری آئے گی کیونکہ ریاست کو بچانے کےلئے اب عمران خان کو گھر جانا ہوگا۔

دوسری جانب وائس چیئرمین پی ٹی آئی شاہ محمود قریشی نے الزام عائد کیا ہے کہ اپوزیشن ارکان اسمبلی کو آفرز کررہی ہے، بولی لگارہی ہے اور ٹکٹوں کے و عدے کررہی ہے، مگر ہمارے ممبران بےیقینی کیفیت کیلئے وفاداری تبدیل نہیں کرینگے۔

یہ بھی پڑھیں: تحریک عدم اعتماد: اسلام آباد سیاسی سرگرمیوں کا مرکز بن گیا

شاہ محمود قریشی نے دو ٹوک الفاظ میں کہا کہ ہم تحریک عدم اعتماد کا مقابلہ کرینگے، ہمیں کوئی گھبراہٹ نہیں ہے۔

ادھر تحریک عدم اعتماد کے معاملے میں ملکی دارالحکومت اسلام آباد سیاسی سرگرمیوں کا مرکز بن گیا ہے۔

مسلم لیگ (ق) کے سربراہ چوہدری شجاعت حسین نے طویل عرصے بعد دارالحکومت اسلام آباد جانے کا فیصلہ کیا ہے، ق لیگی ذرائع کا کہنا ہے کہ چوہدری شجاعت حسین 10 مارچ کو اسلام آباد پہنچ رہے ہیں جبکہ مسلم لیگ (ن) کے صدر و اپوزیشن لیڈر شہباز شریف بھی اگلے ہفتے اسلام آباد پہنچیں گے۔

خیال رہے کہ پی ڈی ایم کے سربراہ مولانا فضل الرحمان نے سابق صدر آصف علی زرداری سے طویل ملاقات کے بعد اعلان کیا تھا کہ تحریک عدم اعتماد وزیر اعظم عمران خان کے خلاف لائی جائے گی جس کے لیے ڈرافٹ تیار ہو چکا ہے اور عدم اعتماد کا مرحلہ ایک دو روز میں آجائے گا۔

Comments

یہ بھی پڑھیں