site
stats
سندھ

کہیں سےڈورہل رہی ہے تو وزیراعظم قوم کواعتماد میں لیں، خورشید شاہ

سکھر : قومی اسمبلی میں اپوزیشن لیڈر سید خورشید شاہ نے کہا ہے کہ نوازشریف کے پاس جےآئی ٹی میں پیش کرنےکیلئےقطری خط کے سواکوئی ثبوت ہی نہیں ہے، کہیں سےڈور ہل رہی ہے تو وزیراعظم قومی قیادت کو اعتماد میں لیں۔

ان خیالات کا اظہار انہوں نے سکھر میں میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کیا، خورشید شاہ کا کہنا تھا کہ جےآئی ٹی متنارعہ نہیں لیکن نواز شریف اور ان کے ساتھیوں کی کوشش ہے کہ اسے متنازعہ بنایا جائے، جےآئی ٹی سے بہت کچھ نکل رہا ہے۔

انہوں نے کہا کہ پہلے قطری خط اورباقی دستاویزات کے بارے میں کوئی ذکر نہیں تھا، وہ تو کبھی جے آئی ٹی تو کبھی پیپلز پارٹی پر الزام لگارہے ہیں جب کہ میاں صاحب کے پاس صفائی کیلیے کچھ بھی نہیں ہے۔

خورشید شاہ نے کہا کہ وزیر اعظم نے جو تقریر پارلیمنٹ میں کی اس کا بھی کوئی ثبوت پیش نہیں کیا گیا، اداروں کو ڈرانا دھمکانا مسلم لیگ نون کی پرانی تاریخ ہے۔

قطر کے حوالے سے ایک سوال کے جواب میں خورشید شاہ کا کہنا تھا کہ نوازحکومت کی خارجہ پالیسی مکمل طور پر ناکام ہوچکی ہے، سعودی عرب اورقطر دونوں ہم سےخوش نہیں ہیں اور ان کے معاملے پرہماری پالیسی بھی واضح نہیں ہے۔

خورشید شاہ کا کہنا تھا کہ پاکستان کے لیے اس وقت اہم معاملہ مسلم ممالک کا اتحاد ہے جب کہ قطر ہمارا برادر اسلامی ملک ہے جس نے مشکل وقت میں پاکستان کی مدد کی ہے اور اب تو قطر نے مشکل وقت میں میاں صاحب کو خط بھی دے دیا ہے۔

انہوں نے کہا کہ نواز شریف اور عمران خان دونوں کے نااہل ہونے کا خدشہ ہے اور نواز شریف تو اپنی باتوں میں ہی جکڑے جا چکے ہیں۔

Print Friendly, PDF & Email
20

Comments

comments

اس ویب سائیٹ پر موجود تمام تحریری مواد کے جملہ حقوق@2018 اے آروائی نیوز کے نام محفوظ ہیں

To Top