The news is by your side.

Advertisement

پیپلزپارٹی جمہوریت کو نقصان نہیں پہچانا چاہتی، خورشید شاہ

اسلام آباد : پیپلز پارٹی کے مرکزی رہنما اور قومی اسمبلی میں قائد حزب اختلاف سید خورشید شاہ نے کہا ہے کہ چیئرمین سینیٹ میاں رضا ربانی کو پارلیمانی کمیٹی کا چیئرمین تجویز کرنا ان کی ذاتی خواہش تھی۔

یہ پیپلز پارٹی کی اجتماعی رائے نہیں تھی۔ ایک بیان میں ان کا کہنا تھا کہ رضا ربانی کے مؤقف کی تائید کرتا ہوں۔

انہوں نے کہا کہ رضا ربانی نے انکار سے قبل مجھے ٹیلی فون کر کے اعتماد میں لیا۔ وہ چاہتے ہیں کہ چیف جسٹس کی سربراہی میں کمیشن فرانزک تحقیقات کرے۔ اگر ایسا نہی ہو سکتا تو پھر پارلیمانی کمیٹی تشکیل دی جائے۔

ان کا کہنا تھا کہ کمیٹی کا چیئرمین اپوزیشن رکن ہونا چاہئے۔ پامانہ لیکس کے حوالے سے انہوں نے کہا کہ وزیراعظم نواز شریف کے بیٹوں حسین نواز ، حسن نواز اور چوہدری نثار نے اعتراف نے معاملہ کو پیچیدہ بنایا۔

خورشید شاہ کا کہنا ہے کہ وہ وزیراعظم کو خط لکھیں گے میں ان کی صحت یابی کیلئے دعا گو ہوں، کسی کی بیماری پر خوش نہیں ہوتے۔

پیپلز پارٹی سیاسی جماعتوں سے مل کر اس مسئلے کا کوئی راستہ نکالنا چاہتی ہے۔ ان کی جماعت نہیں چاہتی کہ جمہوری نظام کو نقصان پہنچے۔

 

Print Friendly, PDF & Email

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں