khursheed عمران خان کی زبان ان کی سب سے بڑی دشمن ہے، خورشید شاہ
The news is by your side.

Advertisement

عمران خان کی زبان ان کی سب سے بڑی دشمن ہے، خورشید شاہ

کراچی : قومی اسمبلی میں اپوزیشن لیڈر اور پیپلز پارٹی کے رہنما سید خورشید شاہ نے کہا ہے کہ نوازشریف نے نیب کو پیپلزپارٹی کےخلاف بنایا تھا، عمران خان کی زبان ان کی سب سے بڑی دشمن ہے، پاکستان میں دہشت گردی افغان جنگ کے بعد آئی۔

ان خیالات کا اظہار انہوں نے اے آر وائی نیوز کے پروگرام’’ اعتراض ہے‘‘ میں خصوصی گفتگو کرتے ہوئے کیا۔ خورشید شاہ نے کہا کہ پیپلزپارٹی اپوزیشن میں بھی کسی سازش کاحصہ نہیں بنی لیکن نواز شریف میمو کیس میں کالاکوٹ اورلال ٹائی پہن کرعدالت گئے۔

میاں صاحب ماضی میں خود پی پی کیخلاف سازشوں میں مصروف رہےہیں، نوازشریف نے نیب کا ادارہ پیپلزپارٹی کےخلاف کارروائی کیلئے ہی بنایا تھا۔

ایک سوال کے جواب میں انہوں نے کہا کہ ہر بار میاں صاحب کی حکومت کو بچانے کاہم نے ٹھیکہ نہیں لے رکھا، عدالتوں نے نوازشریف کے خلاف درست فیصلہ دیا، میاں صاحب سپریم کورٹ کا فیصلہ قبول کریں اور آگے بڑھیں، وہ آج اپنا بویا ہوا بیج کاٹ رہے ہیں۔

ان کا مزید کہنا تھا کہ شرجیل میمن کوپکڑا جاتا ہے، مریم نواز اور کیپٹن صفدر کیلئے بھی ایک ہی قانون ہونا چاہئے، عدلیہ کو کہتا ہوں کہ ڈبل اسٹینڈرڈ بند کرو، کرپشن کوسیاست کی نظرکیاجارہاہے۔

پی ٹی آئی چیئرمین عمران خان کے حوالے سے انہوں نے کہا کہ ان کی زبان ان کی سب سے بڑی دشمن ہے، ملک میں گالم گلوچ کی سیاست نہیں چلےگی، ٹکراؤ کی سیاست ملکی مفاد میں نہیں ہے۔

عمران خان جو آج کہہ رہے ہیں کل ان کو اس کا نقصان ہوگا، عمران خان نے اب تک عوام کیلئے کیا کیاہے؟ ہم نے ہمیشہ ایشوز کی سیاست کی ہے، گالم گلوچ کی نہیں، عوام اورجمہوریت کی بات کرنے والےگالم گلوچ کرتے رہتے ہیں۔

خورشیدشاہ نے کہا کہ ہماری حکومت ہوتی تو فیض آباد دھرنا ہوتا ہی نہیں، ختم نبوت کے قانون کے نام پرسیاست کی گئی، فیض آباد دھرنے والوں نے نبی کے نام پر سیاست کی جو قابل مذمت ہے۔

پاکستان پردنیاکی نظریں ہیں اس پر رحم کیا جائے، یہ سب کرکے ہم دنیا کو کیا پیغام دینا چاہتےہیں، ختم نبوت کےمعاملےپرمنافقت ہوئی ہے، ختم نبوت قانون میں تکنیکی غلطی تھی۔

انہوں نے کہا کہ فیض آباد آپریشن کے وقت ٹی وی چینلز بند کرنے سے عوام میں اور خوف بڑھ گیا تھا، حکومت کو ٹی وی چینلز کو نہیں بند کرنا چاہئے تھا، ٹی وی چینلزاور سوشل میڈیا کو بند کرنےسے کوئی فرق نہیں پڑا، غلط چیزوں سے سیکھ کر آگے بڑھنا چاہئے۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں