site
stats
پاکستان

مقتول بابر بٹ پر سیاسی وفاداریاں تبدیل کرنے کے لیے دباؤ تھا، خورشید شاہ

اسلام آباد : قائدِ حزب اختلاف سید خورشید شاہ نے کہا کہ بابر بٹ کو قتل کی دھمکیاں دی جا رہی ہیں اور جس سے ایس ایچ او بھی آگاہ تھے۔

قائدِ حزبِ اختلاف نے پاکستان پیپلز پارٹی کے مقامی رہنما بابر بٹ کوعوامی مقام پر نہیں گھر میں گھس کرقتل کیاگیا ہے انہیں پہلے سے ہی قتل کی دھمکیاں تھیں۔

اپوزیشن لیڈر خورشید شاہ نے واقعہ کو انتہائی افسوسناک قرار دیتے ہوئے کہا بابر بٹ کودھمکیاں دی گئی تھیں کہ مسلم لیگ (ن) میں شمولیت کرو ورنہ خود ذمہ دار ہو گے۔

خورشید شاہ نے بتایا کہ مقتول بابر بٹ کو ملنے والی قتل کی دھمکیوں سے علاقے کے ایس ایچ او بھی آگاہ تھے تاہم انہیں کسی قسم کی سیکیورٹی فراہم نہیں کی گئی۔

قائدِ حزب اختلاف نے کہا کہ چوہدری منظور کو بھی وفاداریاں تبدیل کرنے کے لیے دھمکیاں مل رہی ہیں ان کی جان کو بھی خطرہ ہے لیکن پنجاب حکومت معنی خیز چپ سادھے ہوئے ہے۔

واضح رہے کہ لاہور کے علاقے مناوال میں پیپلز پارٹی کے مقامی رہنما بابر بٹ کو ان کے گھر میں گھس کر قتل کردیا گیا تھا تاہم اب تک قتل کی وجوہات کا علم نہیں ہوسکا ہے اور نہ ہی ملزمان کے بارے میں کچھ پتہ چلا ہے لیکن پیپلز پارٹی کی قیادت کا دعوی ہے کہ قتل میں مسلم لیگ ن کے مقامی رکن قومی اسمبلی ملوث ہیں۔

Print Friendly, PDF & Email
20

Comments

comments

اس ویب سائیٹ پر موجود تمام تحریری مواد کے جملہ حقوق@2018 اے آروائی نیوز کے نام محفوظ ہیں

To Top