جوائنٹ سیشن میں کشمیر کا ذکر نہ ہونے پر افسوس ہوا: خورشید شاہ -
The news is by your side.

Advertisement

جوائنٹ سیشن میں کشمیر کا ذکر نہ ہونے پر افسوس ہوا: خورشید شاہ

لاہور: اپوزیشن لیڈر خورشید شاہ کا کہنا ہے کہ جوائنٹ سیشن میں کشمیر کا ذکر نہ ہونے پر افسوس ہوا۔ جو بھی حکومت ہو اس کو کشمیر کے لیے جدوجہد کرنا ہوتی ہے۔

تفصیلات کے مطابق پیپلز پارٹی کے رہنما اور قومی اسمبلی میں اپوزیشن لیڈر خورشید شاہ کا کہنا تھا کہ جوائنٹ سیشن میں کشمیر کا ذکر نہ ہونے پر افسوس ہوا۔ ہم نے کشمیر سے یکجہتی کا دن ہمیشہ کی طرح بہترین انداز میں منایا۔

خورشید شاہ کا کہنا تھا کہ پیپلز پارٹی دور میں پاکستان کے مؤقف کی سب حمایت کرتے تھے۔ کل نواز شریف نے کہا بوجھل دل ہے کشمیر پر کیا بات کروں۔ ’میری 7 زندگیاں کشمیر پر قربان میں ایسی بات کبھی نہیں کہہ سکتا‘۔

انہوں نے کہا کہ ہمیں فائدہ ہو یا نہ ہو سیاسی جماعتوں کو توڑنے کے حق میں نہیں۔ کوشش کرتا ہوں زبان سے ہمیشہ اچھے الفاظ ادا کروں۔ ’سر بھی کٹ گئے لیکن ہم نے پاکستان توڑنے کی بات نہیں کی‘۔

خورشید شاہ کا کہنا تھا کہ کشمیریوں کا اپنا فیصلہ ہے انہیں کون سی جماعت چاہیئے۔ ’ایک شخص جو باہر بیٹھا ہے وہ جانے کیوں پاکستان مخالف باتیں کر رہا ہے۔ دعا کریں اگلی بار ہم اکیلے ہی حکومت بنالیں‘۔

انہوں نے مزید کہا کہ آج جو جتنی گالم گلوچ کر رہا ہے اسے اتنی زیادہ ترقی مل رہی ہے۔ ’ملکی سیاست ایشوز پر ہونی چاہیئے، گالم گلوچ پر نہیں‘۔


خبر کے بارے میں اپنی رائے کا اظہار کمنٹس میں کریں۔ مذکورہ معلومات کو زیادہ سے زیادہ لوگوں تک پہچانے کے لیے سوشل میڈیا پر شیئر کریں۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں